New Age Islam
Mon Sep 28 2020, 04:22 AM

Urdu Section ( 23 Sept 2015, NewAgeIslam.Com)

Hajj – The Pilgrimage to Mecca: Essential Message of Islam: Chapter 47 مکہ مکرمہ کے لیے سفر حج: اسلام کا اصل پیغام

 

 

 

 محمد یونس اور اشفاق اللہ سید

11 ستمبر 2015

(مصنفین اور ناشرین کی اجازت کے ساتھ نیو ایج اسلام کی خصوصی اشاعت)

47۔ مکہ مکرمہ کے لیے سفر حج

قرآن ہر مستطیع مسلمان کو رضائے الٰہی کے لیے حج 1، اور عمرہ2، کرنے کا اور  مکہ میں اللہ کی عبادت کے لیے اس  سب سے پہلے گھر کے لیے رخت سفر باندھنے کا حکم دیتا ہے3، جس کی تعمیر حضرت ابراہیم علیہ السلام نے کی تھی، اور جو تمام لوگوں کے لیے امن اور سلامتی کی جگہ ہے 4۔  اور اسی طرح حج کے دوران مسلمانوں کو کسی بھی بے حیائی، بدکاری،  نزاع5 اور  کسی جوں اور مکھیوں کو بھی مارنے سے منع کیاگیا ہے6۔  حج کے علاوہ کے اوقات میں قصر کے ساتھ مراسم حج کی ادائیگی کو عمرہ کہا جاتا ہے۔

حج کی ادائیگی ایام مخصوصہ میں کی جاتی ہے5۔حج کے دو ایام مخصوصہ کے اختتام کے بعد حجاج کرام روانہ ہو سکتے ہیں،  لیکن انہیں ایام حج کے بعد بھی مکہ میں قیام کرنے کی اجازت ہے، مثلاً وہ ایام  حج کے دوران تجارت وغیرہ کر کے اللہ کی نعمتیں تلاش کر سکتے ہیں8۔ رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانے میں بھی حجاج کرام کے قافلے میں ایام حج کے دوران تجارت کرنے کےلیے تاجر بھی ہوا کرتے تھے۔ اور یہ دور دراز سے آنے والے ایک بڑی تعداد میں حجاج کرام کی خوراک اور بنیادی ضروریات اور خدمات فراہم کرنے کے لئے ضروری بھی تھا۔

قرآن طواف کعبہ کرنے، دو پہاڑیوں یعنی صفا اور مروہ کے درمیان سعی کرنے، عرفات کے میدان میں چلنے 11، اللہ کی رحمت تلاش کرنے 12،  سر منڈوانے 13، بالوں کو کتروانے 14، اور جانوروں کی قربانی دینے جیسے حج کے اہم عناصر کو بیان کرتا ہے  (37/22:36)

"اور قربانی کے بڑے جانوروں (یعنی اونٹ اور گائے وغیرہ) کو ہم نے تمہارے لئے اﷲ کی نشانیوں میں سے بنا دیا ہے ان میں تمہارے لئے بھلائی ہے پس تم (انہیں) قطار میں کھڑا کر کے (نیزہ مار کر نحر کے وقت) ان پر اﷲ کا نام لو، پھر جب وہ اپنے پہلو کے بل گر جائیں تو تم خود (بھی) اس میں سے کھاؤ اور قناعت سے بیٹھے رہنے والوں کو اور سوال کرنے والے (محتاجوں) کو (بھی) کھلاؤ۔ اس طرح ہم نے انہیں تمہارے تابع کر دیا ہے تاکہ تم شکر بجا لاؤ (22:36)۔ ہرگز نہ (تو) اﷲ کو ان (قربانیوں) کا گوشت پہنچتا ہے اور نہ ان کا خون مگر اسے تمہاری طرف سے تقوٰی پہنچتا ہے، اس طرح (اﷲ نے) انہیں تمہارے تابع کر دیا ہے تاکہ تم (وقتِ ذبح) اﷲ کی تکبیر کہو جیسے اس نے تمہیں ہدایت فرمائی ہے، اور آپ نیکی کرنے والوں کو خوشخبری سنا دیں"(22:37)۔

47.1۔ جانوروں کی قربانی کا مقصد تقوی کا حصول ہے

مذکورہ بالا آیات (37/22:36) سے تین نکات واضح ہیں۔ اول؛ خدا کے نام سے جانوروں کو ذبح کرنا خالصتا ایک علامتی عمل ہے، اس لیے کہ جانور کا گوشت یا خون خدا تک نہیں پہنچتا ہے۔ دوم؛ مادی سیاق و سباق میں مذبوحہ مویشیوں کے گوشت کو حجاج کرام کھائیں گے، اور اسے غریب اور ضرورت مندوں میں تقسیم بھی کیا جا سکتا ہے۔ لیکن اس کا مقصد حقیقی تقوی ہے جس کی تائید دوسری آیتوں میں بھی کی گئی ہے۔

قبل از اسلام عرب کے خانہ بدوش معاشرے میں، مویشی ہی اصل اثاثہ ہوا کرتے تھے۔ ان کے ساتھ عزت کا سلوک کیا جاتا تھا، اور مختلف دیوی دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لیے ان کی قربانی دی جاتی تھی۔ قرآن نے اس رسم کو جاری رکھنے کی اجازت دی ، لیکن اسے صرف خدا کے لیے محفوظ رکھا۔15

آج، حجاج کرام خود سے نہ تو مویشی ذبح کرتے ہیں اور نہ ہی وہ اس کا گوشت کھاتے ہیں یا انہیں غریبوں میں تقسیم کرتے ہیں (22:36)۔ اس کے علاوہ، آج اللہ کی نعمتوں میں کئی گنا اضافہ ہوگیا ہے اور اب ایک مویشی کو وہ اہمیت حاصل نہیں ہے جو اس دور میں ہوا کرتی تھی۔ لہٰذا، آج یہ بات قابل غور ہے کہ ایک بینک یا ایجنٹ کے تعاون سے محض جانوروں کی قربانی اور پھر ایک ریاست کے تعاون سے اس پر عمل درآمد کرنا اور ریاست کا ہی غریب ممالک کے درمیان گوشت کرنا تقسیم کیا واقعی قرآن کا منشاء پورا  کرتا ہے یا ضرورت مندوں کی مدد کرنے کے اس سے بھی بہتر طریقے ہو سکتے ہیں، مثلاً ایک بین الاقوامی حج ریلیف فنڈ کا قیام؛ واللہ اعلم بالصواب!

نوٹس

1۔ 3:97۔

2۔ 2:196، 22:27۔

3۔ 3:96۔

4۔ 2:125، 3:97۔

5۔ 2:197۔

6۔ 5:95۔

7۔ 2:203۔

8۔ 2:198۔

9۔ 2:125

10۔ 2:158۔

11۔ 2:199۔

12۔ 202/2:201۔

13۔ 2:196۔

14۔ 48:27۔

URL for English article:  http://www.newageislam.com/books-and-documents/muhammad-yunus---ashfaque-ullah-syed/hajj-–-the-pilgrimage-to-mecca--essential-message-of-islam--chapter-47-and-48-(concluding-part)/d/104552

URL for this article: http://www.newageislam.com/urdu-section/muhammad-yunus---ashfaque-ullah-syed/hajj-–-the-pilgrimage-to-mecca--essential-message-of-islam--chapter-47---مکہ-مکرمہ-کے-لیے-سفر-حج--اسلام-کا-اصل-پیغام/d/104692

 

Loading..

Loading..