New Age Islam
Sun Sep 20 2020, 11:41 PM

Urdu Section ( 25 Oct 2013, NewAgeIslam.Com)

An Essay On Fundamentalism تشدد کی تعبیر

 

  بیٹھو۔ یہ تو محض ایک جھلک ہے۔ ذرا سعودی عرب کے وزارت تعلیم کی طرف سے منظور وہاں نصاب میں موجود کچھ مثالوں کو دیکھیں تو تصویر اور صاف ہو جائے گی۔ چاہئے۔ جو مسلم کوئی اور مذہب اپنا لے اسے قتل کر دیا جانا چاہئے۔ ایک مسلمان کے لیے جائز ہے کہ اس کا خون بہا دے اور اس کی جائیداد پر قبضہ کر لے. '' ہے کہ اللہ کے دو پہلو ہیں۔ پہلا اس کا تصور ، جس میں داخل ہونے کی اجازت کسی کو نہیں۔ اللہ سے وابستہ عبادت اور تصور ( اللہ تک پہنچنے کا ذریعہ جیسے سنی خلیفہ یا شیعہ امامت ) دو بالکل الگ الگ چیزیں ہیں۔ تصور تک آکر وہابیت باقی اسلام سے دور ہو جاتی ہے۔ کی بیٹی فاطمہ رضی اللہ عنہ، ابو بکر رضی اللہ عنہ اور عمر رضی اللہ عنہ کی مزارے اور مساجد اہم ہیں۔ گنج بخش سمیت کئی مزاروں پر مسلسل وہابی طالبانی حملے ہوئے۔  رنگيلی اوہی كھلاوے ، جوسہیلی ہووے فنا فی اللہ/ ہوری کھیلونگی کہہ کر بسم اللہ / الستو بربیكم پيتم بولے، سبھ سكھيا نے گھونگھٹ کھولے ؟ کالو بلا ہی یوں کر بولے ، لا الہ الا اللہ / ہوری کھیلونگی کہہ کر بسم اللہ ۔''  من کے تار گشتا حاجت جننار نيست '' ( عشق کا کافر ہوں مسلمان ہونا میری ضرورت نہیں۔ میری ہر رگ تار بن چکی ہے مجھے جنیؤوں کی بھی ضرورت نہیں )۔URL for Hindi article:

http://www.newageislam.com/hindi-section/an-essay-on-fundamentalism-कट्टरता-की-इबारत/d/14111

URL for this article:

http://www.newageislam.com/urdu-section/khurshid-anwar,-tr-new-age-islam/an-essay-on-fundamentalism-تشدد-کی-تعبیر/d/14154

 

Loading..

Loading..