certifired_img

Books and Documents

The War Within Islam (10 Sep 2010 NewAgeIslam.Com)



Suicide Bombings: Why is Pakistan such a failed state?

By Zafar Agha

 

(Translated from Urdu by Arman Neyazi)

 

We are neither not an Islamic scholar nor experts in Shariah. Even then we all know from our ancestors and it is imprinted in our hearts and minds that the month of Ramadan is meant for prayers. This is a month of God's forgiveness and kindness and all-round development. We the faithful are supposed to observe fast and pray during the day and offer Taraweeh and recite Quran during the night. In short it is the month which is called the month of the Creator. That is the reason why God has ordered only for two things during this month, to pray to Him to the best of one’s ability and help the poor and needy in the form of Khairat and Zakat.

 

During this blessed month of Ramadan no Muslim can even imagine getting involved in fighting or any type of terror. In such a sacred month every Muslim is supposed to keep himself engaged in Saum-o-Salaat and recitation of the Holy Quran. And yet in a country that is proud of being called an Islamic republic, there is a group which is involved in killings and that too of its own Muslim brethren. More than that, this group calls itself Muslim, and as if that were not enough of an outrage, a Mujahid of Islam. You would have understood which group I am referring to. This so called Muslim group is known as the "Pakistani Talibaan". This is the very group which killed hundreds of Shia Muslims first in Lahore and then at Gauri through suicide bombing. The question is what kind of an Islam this is that these Pakistani Taliban wish to establish. What was the crime of those killed? They were celebrating the Martyrdom Day of the fourth Muslim Caliph Hazrat Ali (KW). Then there was an attack in Quetta where the killed were celebrating "Yom-e-Qudus" in support of Palestinians on the occasion of the last Friday of Ramadan. The people killed were gathering for special prayer to get Quibla-e-Awwal liberated from the Jews. Is celebrating the Martyrdom Day of Hazrat Ali a crime? Hazrat Ali was the person who had been the Commander of the Prophet’s army in every battle. This brother of Prophet Mohammad (saw) served the Prophet all through his life. When Prophet Mohammad (saw) was migrating from Medina to Mecca he asked Hazrat Ali to sleep in his bed so that the Kuffar take him to be the Prophet himself. Such was the persona of Hazrat Ali and he is the one who is one of the caliphs of Muslims and the Imam of the Shia sect. Will the Group who attacks the procession of the people celebrating the Martyrdom Day of Hazrat Ali and gathering to pray to the Almighty for the freedom of Quibla-e-Awwal from the clutches of the Jews be called Muslim? What kind of an Islam it is?

 

The question is who are these Pakistani Taliban? This is the Group which calls itself an enemy of America whereas it has never inflicted any harm to it because its activities are limited to the territory of Pakistan only. 98% of the Pakistanis are Muslim and this organisation makes only Pakistanis it victim. Pakistani Taliban have only three enemies such as Pakistani Shias, Pakistani Sunni of the Bareilvi school and India. Whatever Pakistan may say, the fact remains that Hafiz Saeed is the patron of this outfit and he is creating such an Islamic ideology of which the main pillars are suicide attacks and killings and terrorism. What kind of Islam it is which allows the killing of innocent people in the Taj Mahal Hotel, Mumbai. Does the Holy Quran ask us Kill the innocent people of a foreign country? As far as we know Quran says everybody is free to follow its religion. So who are these Pakistani Talbanis to punish anybody. Punishment is the prerogative of only Allah, the Almighty and nobody else.

 

Prophet Mohammad (saw) had spread the message of Mercy and Benevolence but a section of his followers has become a source of tyranny for his own people. This is not Islam but lunacy which has no objective except that of spreading hate and distrust in Pakistan.

 

Now, there cannot be any hesitation in accepting that Pakistan has become a failed State and its reason lies in the fact that Zia ul Haque's military government decided to establish modern secular system in Pakistan. Hence in this Pakistan there came a ritual of Medieval age of lashing the men and stoning of the women and this mindset of Zia ul Haque reached to a point where it started to be discussed as to which Islam is the real Islam and it created an Islam of the Talibani kind which is not ready to accept any other country's Islam or other sect as Muslim. This is the reason why this Talibani Islam is not fighting America but is rather indiscriminately firing at the Sufi shrines or on the Shias. If somebody is falling victim of this terror it is the Islam of Prophet Mohammad (saw) itself. The Islam of the Prophet Mohammad (saw) does not allow any bloodshed of at all.

 

May God save us from the tyranny of such Islamists!!!

 

URL: http://www.newageislam.com/the-war-within-islam/suicide-bombings--why-is-pakistan-such-a-failed-state?/d/3420

 

 

بم دھماکے : پاکستانی حکومت نا کام

ظفر آغا

ہم کوئی عالم دین نہیں، کوئی ماہر شرعیہ نہیں ، لیکن علمائے دین اور دوسروں سے ماہ رمضان کے بارے میں جو کچھ بھی سنتے چلے آرہے ہیں وہ آج بھی ذہن میں نقش ہے اور وہ بس یہی ہے کہ رمضان عبادتوں کا مہینہ ہے ، برکتوں کا مہینہ ہے ۔ اس ماہ مبارک میں دن میں بارگاہ خدا میں روزہ رکھئے ، صوم صلوٰۃ میں وقت گزاریے ، راتوں میں تلاوت قرآن کریم فرمایے اور تراویح میں گزارا کیجئے ۔ الغرض  یہ ماہ رمضان وہ مبارک مہینہ ہے کہ جس کو پروردگار کا مہینہ  کہا جاسکتا ہے ۔ تب ہی تو خود اللہ کی جانب سے اس ماہ میں محض دو باتوں کاحکم ہے۔ اولاً عبادت الہٰی  اور دوئم خیرات و زکوٰۃ ، یعنی  اس ماہ میں  اللہ کو یاد کرو اور اللہ کی مجبور و لاچار مخلوق کی مدد کرو۔

ایسا مبارک و عظیم الشان مہینہ ہے یہ مارہ رمضان ۔ اس ماہ عبادت و ماہ خدا وندی میں کوئی مخلص مسلمان فتنہ و فساد کا تصور بھی  نہیں کرسکتا ہے۔ ایسے عبادت و ریاضت الہٰی  کے مہینے  میں ، جب کہ وقت صوم صلوٰۃ اور تلاوت و تراویح میں بسر ہو۔ ایسے میں بھلا کون مسلمان کشت و خون  کا تصور کرسکتا ہے، لیکن  نہیں خود کو خدا داد مملکت کہلوانے والے ‘‘اسلامی’’ ملک پاکستان میں ایک ایسا بھی گروہ ہے جو اس مبارک ماہ رمضان میں بھی گشت و خون سےباز نہیں آرہا  ہے اور تو او ریہ گروہ عبادتوں ، نمازوں ، روزے اور تراویح  کے اس مہینے میں کسی اور کانہیں خود مسلمان کے ہی ایک گروہ کا خون بہارہا ہے اور یہ گروہ جو اس  پاک مہینہ  رمضان میں قتل و غارت کا بازار گرم کررہا ہے خود کو مسلمان کہتا ہے اور اسلام کا  مجاہد بھی کہتا ہے ۔ آپ  سمجھ گئے ہوں گے کہ میرا اشارہ  کس طرف ہے ، خود کو مسلمان کہنے والا یہ گروہ پاکستانی طالبان کے نام سے جانا جاتا ہے ۔ یہ وہی گروہ ہے ، جس نے ابھی گزشتہ ہفتے عین رمضان مبارک  میں پہلے لاہور اور پھر کوری میں شیعہ مسلمانوں پر خود کش حملے کر کے تقریباً سو بے گناہ مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ آخر یہ  کون سا نیا اسلام ہے، جو یہ پاکستانی طالبان رائج کررہے ہیں ؟ اور کیا گناہ تھا ان کا جن پر ان پاکستانی طالبان نے حملہ  کر کے بے گناہوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا تھا؟ یہی نہ کہ وہ جو مارے گئے وہ جلوس کی شکل میں مسلمانوں کے چوتھے خلیفہ حضرت علی کایوم شہادت منارہے تھے ۔ پھر کوئٹہ میں جلوس پر حملہ  ہوا اور  وہ لوگ فلسطین کی حمایت میں جمعۃ الوداع کے روز یوم قدس منارہے تھے ۔ یہ وہ لوگ تھے جو قبلہ اوّل کی یہودیوں سے رہائی کے لئے دعا و نماز کے لیے اکٹھا ہوئے تھے ۔ کیا حضرت علی کا یوم شہادت مناناگناہ ہے؟ اور کیسی شخصیت تھی  مولائے کائنات حضرت علی کی؟ پوری زندگی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم  کی خدمت میں گزاری رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے اس بھائی نے ہر جنگ میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے کمانڈر ہے۔ جب رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم  مدینہ ہجرت کر کے مکہ کے سفر پر روانہ ہوئے تو حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت علی سے کہاکہ تم ہمارے بستر پر سو  رہو تاکہ کفار سمجھیں گے کہ اللہ کے رسول صلی اللہ علیہ وسلم آرام فرمارہے ہیں ۔ ایسے صحابی اور خادم اسلام کا نام تھا علی او ریہی علی مسلمانوں کے خلیفہ  اور شیعہ فرقے کے امام بھی ہیں ۔ ایسی عظیم الشان اسلامی  شخصیت کے  سوگ میں ایک جلوس نکلا اور اس جلوس میں نہتوں پر حملہ کرنے والے خود کو مسلمان کہیں ؟  آخر یہ کون سا اسلام ہے، جس کاڈھنڈورہ پاکستانی طالبان پیٹ رہے ہیں ۔ ایسے ہی  کیا قبلہ اوّل کی بازیابی کے لیے نکالے جانے والے جلوس پر حملہ کرنے والوں کو مسلمان کہا جائے گا۔

آخر یہ پاکستانی طالبان ہیں کون؟ یہ وہ گروہ ہے، جو کہنے کو خود کو امریکہ کا دشمن کہتا ہے  ، لیکن اس گروہ نے آج تک امریکہ کو کوئی نقصان نہیں  پہنچایا ہے، کیونکہ  پاکستانی طالبان کے اندر ہی سر گرم ہیں اور پاکستان کی تقریباً 98 فیصد آبادی  مسلمان ہے اور یہ پاکستانی طالبانی شہریوں کو ہی اپنا نشانہ بناتے ہیں ۔ پاکستانی طالبان کے تین اہم دشمن ہیں اور وہ ہیں : پاکستانی شیعہ، پاکستانی بریلوی سنی اور تیسرا دشمن ہندوستان ہے۔ بھلے ہی حکومت پاکستان کچھ کہے ، لیکن دنیا واقف ہے کہ حافظ سعید  اس پاکستانی طالبان گروہ کے گارجین ہیں اور وہ ایک ایسی اسلامی فکر پیدا کررہےہیں ، جس میں قتل و غارت گری اور دہشت گردی عین اسلام بنتا جارہا ہے ۔ آخر یہ کون سا اسلام ہے ، جو تاج محل ہوٹل ممبئی میں بے گناہوں پر دہشت گردانہ حملے کی اجازت دیتا ہے؟ کیا قرآن  پاک یہ کہتا ہے کہ کوئی تمہارے ملک کا نہ ہوتو تم اس کو گولیوں سےبھون ڈو؟ ہم نے تو قرآن کے بارےمیں  یہی سنا تھا کہ اس کی ہدایت یہ ہے کہ  ہر کسی کو اس کا دین مبارک ۔ تو پھر کون ہوتےہیں یہ پاکستانی طالبان کسی کو مذہب کے نام پر موت کی سزا دینے والے؟ جزا و سزا کا اختیار سوائے خداوند کریم کے او رکسی کے ہاتھ میں نہیں ہے۔ قرآن کریم ایک نہیں ہزار جگہ یہ فرماتا ہے کہ اللہ نے روز قیامت صرف اسی لیے متعین کیا کہ اس روز وہ  خود ہر شخص کی جزا و سزا کا فیصلہ کرے گا، لیکن نہیں  ، حافظ سعید  کی قیادت اور ان کے مدرسوں سےنکلنے والے نعوذ باللہ خو د کو اللہ سے بھی برتر سمجھ کر مسلمانوں کو قیامت سے پہلے موت کی سزا دے رہے ہیں۔

آج کسی کو یہ سمجھنے کی ضرورت نہیں ہے کہ خود کو ‘‘اسلامی ’’ ملک کہلوانے والے ‘‘ مملکت خداداد ’’ یعنی پاکستان کی کیا حالت زار ہے۔ ایک طرف سیلاب کا عذاب تو دوسری جانب طالبان کی گولیوں  کی برسات ۔ آج لاہور او رکراچی  جیسے شہروں میں صوفیائے کرام کی درگاہیں  محفوظ نہیں ہیں اور تو اور خود کو اسلام کا محافظ بتانے والے یہ طالبان  مسجدوں میں گھس کر عین وقت نماز خود مسلمانوں پر گولی برسارہے ہیں ۔ میں نے عرض کیا کہ میں نہ عالم دین ہوں اور نہ ماہر شریعت ، لیکن میں اتنا ضرور سمجھتا ہوں کہ محمد عربی صلی اللہ علیہ وسلم کا اسلام ایسا نہیں ہوسکتا کہ جو خود اپنوں کے لیے قہر بن جائے۔

ساری دنیا کو رحمت کا پیغام دیے کر گئے تھے ، لیکن ان کا ماننے والا ایک گروہ اب خود اپنوں کے لیے   ایک مصیبت بن گیاہے۔ یہ اسلام نہیں  دیوانگی ہے، جس کا کوئی مقصد نہیں سوائے پاکستان میں بد امنی پیدا کرنے کے۔

ہمیں یہ تسلیم  کرنے میں بھی کوئی عذر نہیں ہوسکتا کہ پاکستان ایک ‘‘ ناکام اسٹیٹ’’ میں شامل ہو چکا ہے اور اس کی وجہ  یہ ہے کہ ضیاء الحق کے وقت سےوہاں  کے فوجی نظام نے یہ فیصلہ کیا کہ وہ پاکستان میں ایک  اسلامی نظام قائم کرے گی ۔ چنانچہ اس پاکستان میں نظام مصطفیٰ صلی اللہ علیہ وسلم کے نام پر لوگوں کو میڈویل طرز پر کوڑوں کی سزا  اور سنگسار کرنے کا طرز  قائم ہوا ۔ پھر ضیاء الحق نے جس میڈویل نظام کو ہوا دی، اس نظام میں بات  یہاں تک پہنچی کہ کون سا   اسلام اصل اسلام ہوسکتاہے اور اس بحث نے ایک نئے طرز کا طالبانی اسلام پیدا کردیا،  جو کسی دوسرے فرقے کو مسلمان ماننے کو تیار نہیں ہے ۔ تب  ہی  تو آج پاکستانی طالبان امریکہ کے خلاف جہاد کے بجائے    کبھی شیعوں کو نشانہ بنارہے ہیں تو کبھی  درگاہوں پر گولی برسا رہے ہیں اور اس دہشت  میں    سب سے زیادہ نقصان میں  کوئی  ہے تو وہ ہے خود نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا اسلام، کیونکہ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا اسلام کسی بھی بے گناہ کو مارنے کی اجازت کبھی نہیں دیتا۔اسلام کو اگر کسی خطرہ ہے تو وہ خود پاکستانی طالبان سے جواب خود اسلام کو ہی بدنام کرنے پر آمادہ ہوگئے ہیں ۔ تب ہی تو ان کے  لئے رمضان کا مہینہ عبادت و ریاضت اور امن  کامہینہ نہیں، بلکہ قتل و خون کا مہینہ بن گیاہے اور ایسے  پاک مہینے  میں بھی  وہ موت کا بازار گرم کرنے سے باز نہیں  آرہے ہیں ۔

 URL:

http://www.newageislam.com/the-war-within-islam/suicide-bombings--why-is-pakistan-such-a-failed-state?/d/3420





TOTAL COMMENTS:-    


Compose Your Comments here:
Name
Email (Not to be published)
Comments
Fill the text
 
Disclaimer: The opinions expressed in the articles and comments are the opinions of the authors and do not necessarily reflect that of NewAgeIslam.com.

Content