certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

Shariat Vs Constitution: Supreme Court Ready for the Hearing  شریعت بنام آئین: سپریم کورٹ میں صف آرائی مکمل
A Rahman, New Age Islam

سپریم کورٹ کی ہدایت پر جو جوابی حلف نامے اور 30مارچ کی مقررہ تاریخ پر تحریری گزارشات او ردلائل داخل عدالت کئے گئے ان کا تجزیہ کرنے سے پہلے ضروری ہے کہ بھارتیہ مہلا آندولن کے موقف اور دعوے پر نظر ڈالی جائے ، جو دراصل سپریم کورٹ کی مفادِ عامہ والی پٹیشن کا محرک سمجھا جاناچاہئے ۔ (یاد رہے کہ زیر بحث مسائل میں نکاح حلالہ اور تکثیر ازواج بھی شامل ہیں حالانکہ قانونی لڑائی اور میڈیا میں بحث جس شدّ و مد سے طلاق ثلاثہ پر ہے اتنازور بقیہ دو مسائل پر نہیں دیا جارہا اور اس کی وجوہات کافی دلچسپ ہیں، لیکن وہ ذکر بعد میں ہوگا۔

 

Come out of the Closet, Times have Changed  !حجرے سے باہر آئیے حضرت ، زمانہ بدل گیا ہے
Dr QamarTabrez

سرکاریں بھی مسلمانوں کے لیے کچھ کرناچاہتی ہیں، لیکن کوئی ان کے پاس جانے کو تیار ہی نہیں ہے۔ نریندر مودی نے وزیر اعظم بنتے ہی کہا تھا کہ مسلمان اپنے مسائل لے کر ان کے پاس آئیں گے، تو رات کے بارہ بجے بھی ان کا دروازہ کھلا رہے گا ۔ کتنے مسلمان اپنے مسائل کو لے کر آج تک ان کے پاس گئے؟ اس ملک میں ہندوؤں کی اکثریت مسلمانوں سے ہمدردی رکھتی ہے ۔ چندمٹھی بھر لوگ ہیں، جو مسلمانوں سے نفرت کرتے ہیں جس کی وجہ سے بعض دفعہ خون خرابہ ہوجاتا ہے ۔ لیکن ہندوؤں کی اکثریت سیکولر ذہنیت کی حامل ہے۔

 

AIMPLB's Code of Conduct and Social Boycott: New and Serious Legal Problems  مسلم پرسنل لاء بورڈ کا کوڈ آف کنڈکٹ اور سوشل بائیکاٹ : نئے اور سنگین قانونی مسائل
A Rahman, New Age Islam

سوشل بائیکاٹ کی تجویز پیش کر کے مسلم پرسنل لا ء بورڈ نے ایک نئی مصیبت مول لے لی ہے کیونکہ ایک تو قرآن میں سوشل بائیکاٹ جیسی کسی سزا کا تصوّر بلکہ ذکر تک نہیں پایا جاتا ( تکفیر کی صورت میں ایسی کچھ سزاؤں کا ذکر ہے لیکن وہ بھی خلفائے راشدین کے بعد) دوسری طرف چاروں میں سے کسی امام نے بھی سو شل بائیکاٹ کی تعریف بھی متعین یا مقرر نہیں کی ۔ اس کے علاوہ مسلم پرسنل لاء بورڈ کے پاس نہ تو اس سزا کے نفاذ کا اختیار ہے او رنہ ذرائع ۔ اور اگر مطلوبہ ذرائع مہیاّ کر لئے جائیں تو سزا کا اعلان کون کرے گا۔

 

Urdu Courses and Madrasas  اردو نصاب اور مدارس
Dr Tauqeer Rahi

دارالعلوم دیوبند کی فکر سے متاثر کچھ مدارس کو چھوڑ کر اکثر مدارس نے وقت کے تقاضوں کی محسوس کیا ہے، عصری علوم خصوصاً انگریزی ،ہندی کی اہمیت کومحسوس کیا ہے۔بیشتر مدارس نے اپنے نصاب میں (+2) انٹر کے مساوی انگریزی کوداخل کیا ہے۔ جامعہ سلفیہ بنارس میں ہندی بھی باضابطہ پڑھائی جاتی ہے اور انگریزی بی اے لیول کی داخل نصاب ہے۔ اس کے علاوہ بعض مدارس نے نہ صرف عصری علوم کو اپنے نصاب میں داخل کیا ہے، بلکہ تکنیکی تعلیم، کمپیوٹر ٹریننگ ، حفظان صحت اور امور خانہ داری ( لڑکیوں کے مدارس و جامعات) کی مکمل تربیت کا انتظام کیا ہے۔

 

Triple Talaq: Accountability of Action is a Must  طلاق ثلاثہ: قول وعمل کا احتساب ضروری
Uzma Naheed

ایک نشست میں تین طلاق ایک سزا ہے۔ اور نفسانی تسکین کے لیے دی جائے تو گناہ ہے۔ اب یہ کام علمائے کرام کا ہی ہے کہ اگر اسلام کو کھلم کھلا مذاق اڑایا جارہا ہو اور خود ملّت اسلامیہ میں باعث فساد بن رہی ہو تو اس وقت چاہے حکومت سے مطالبہ بطور تعصب ہو یا واقعتہً فکر مند ہو، یہ سوچنا ہمارا ہی فرض ہوگا کہ اس عمل سے عوام الناس کو کیسے باہر نکالا جائے اور اسلام کے لیے مفید قانون ثابت کیا جائے ۔ میں تقریباً 30سال سے یہ تجربہ کرر ہا ہوں کہ لوگ تین طلاق کے بند کرنے کامطالبہ کررہے ہیں او رہم مسلسل اور بہ اصرار تمام اس کی validityپر بات کررہے ہیں ۔

 

Will This Appeal Effect  کیا اس اپیل کا اثر ہوگا؟
Shamim Tariq

مسلم معاشرہ کس حد تک ابتری اور اخلاقی گراوٹ کا شکار ہوچکا ہے اس کا اندازہ ملی قیادت کو نہیں ہے۔ بھیک مانگنے والوں میں ہر چوتھا شخص مسلمان ہے ۔ جسم فروشی کرنے والوں میں مسلمانوں کی تعداد بڑھ رہی ہے ۔ قبرستان اور اوقاف کو غصب یا ان کے مال میں غبن کرنے والوں میں مسلمان سب سے زیادہ ہیں ۔ مسلمانوں کاکوئی ادارہ یا ٹرسٹ جھگڑے فساد سے خالی نہیں ہیں دادری جیسے کتنے واقعات ملک میں ہوئے؟ مسلمانوں کی کتنی صنعتیں تباہ ہوئیں یہ سب جاننے کے لئے دوسروں کی محتاجی ہے۔مسلمان اپنے طور پر اپنی معاشی، سماجی، تعلیمی پستی کا اندازہ بھی نہیں لگا سکے ہیں ۔ ان کی بستیوں میں امیر و غریب او ر اعلیٰ و ادنیٰ کی خلیج بڑھ رہی ہے۔

What is the Ruling of Talaq Pronounced Without Witnesses?  گواہوں کے بغیر دی گئی طلاق کا کیا حکم ہے؟
Ghulam Ghaus Siddiqi, New Age Islam

سب سے بہتر طلاق کا طریقہ جو قرآن کریم نے بتایا ہے اسے اسلام کے اکابرین، فقہائے کرام اور علمائے عظام طلاق احسن کا نام دیتے ہیں۔ اس موضوع پر میں قرآن و سنت اور آثار صحابہ اور علمائے جمہور کے دلائل کی روشنی میں تفصیل سے میں ایک کتابچہ لکھ رہا ہوں ، جسے بہت جلد منظر عام پرلانے کی کوشش کر رہا ہوں ۔(ان شاء اللہ)۔یہاں صرف علمائے کرام اور اکابرین کی بارگاہ میں یہ سوال رکھنا مقصود ہے کہ  کیا کسی ایسے قانون کو بنایا جا سکتا ہے جس میں یہ کہا جائے کہ  ’’کوئی شخص بغیر گواہوں کے طلاق نہ دے ۔

 

Triple Talaq is Revocable Divorce from the Quran's Point of View  تین طلاق قرآن کی رو سے ایک طلاق رجعی ہی ہے
Aldaktur Furqan Meharban al-Madani

اس میں کوئی شک نہیں کی ایک مجلس کی تین طلاقو ں کے تین ہی نافذ کرنے سے میاں بیوی کے درمیان صلح و مفاہمت کے تمام امکانات ختم ہوجاتے ہیں جس سے خاندان کے خاندان اُجڑ جاتے ہیں او رمعصوم بچے بے گھر او ربے سہارا ہوجاتے ہیں ۔ مطلقہ عورت کے سامنے مصائب کے پہاڑ کھڑے ہوجاتے ہیں ۔ وہ روتے روتے اپنی آنکھوں کے آنسوں خشک کر لیتی ہے او راس کی آنکھوں کے سامنے ہر وقت اندھیرا چھا جاتاہے۔ اسے اپنی اگلی منزل نظر نہیں آتی۔ وہ بے یار و مددگار ہوجاتی ہے، حتیٰ کہ دورانِ عدت وہ شوہر کی جانب سے خرچے سے بھی محروم ہوجاتی ہے اورتین طلاق نافذ ہونے کا فتویٰ دینے والے ہمارے مقلد علمائے کرام اسے اپنے پہلے شوہر کی جانب لوٹ جانے کے لئے حلالے کی ترغیب دلاتے ہیں۔

 

حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا فیصلہ اور امیر المومنین حضرت عمر رضی اللہ عنہ کا فیصلہ ایک دوسرے کے فیصلے کے خلاف نہیں ، بلکہ بوقت حاجت شریعت کے عین مطابق ہے،تو اب اس بات پر غور کرناانتہائی لازم ہوجاتا ہے کہ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے ایک مجلس میں دی جانے والی تین طلاق کو ایک طلاق کیوں قرار دیا، اور حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے ایک مجلس میں دی جانے والی تین طلاق کو تین طلاق کیوں قرار دیا؟

 

Why Lynching in the Name of Blasphemy  توہین رسالت کے نام پر قتل کیوں
Malik Ashtar Nauganvi

مشال خان کا قتل افسوس سے زیادہ فکر کا لمحہ ہے ۔ مشال کے قتل کا ویڈیو دیکھئے اور دو چیزوں پر غور کیجئے ۔ پہلی چیز ایک نوجوان کو پتھر وں اور ڈنڈوں سے پیٹ پیٹ کر قتل کیا جا رہا ہے اور فضا میں اللہ کی کبریائی کے نعرے بلند ہورہے ہیں ۔ لوگ دم توڑ تے نوجوان کو ٹھوکریں مار رہے ہیں ، لاٹھیاں مار رہے ہیں ، پتھر سے سر کچل رہے ہیں اور ہر ضرب کے ساتھ اللہ اکبر کا نعرہ لگاتے جاتے ہیں ۔ دوسری چیز دیکھئے کہ یہ قاتل کون ہیں ۔ ان سب کے نام تو نہیں پتہ لیکن حلیہ سب کا ایک جیسا ہے ۔ داڑھی ہے اور شلواڑ کرتا ہے۔ دیکھنے میں سب کے سب ماشا اللہ مومن نوجوان لگ رہے ہیں اور یقینی طور پر ان میں سے کئی مولویت پڑھے ہوئے ہیں ۔

 

Media Pressure, and the Muslim Personal Law Board  میڈیا کا دباؤ اور مسلم پرسنل لاء بورڈ
Shakeel Shamsi

مسلم پرسنل لاء بورڈ یقیناًمسلمانوں کا ایک ایسا واحد ادارہ ہے جس میں سبھی مسالک کی بھر نمائندگی ہے اور دوسری خاص بات یہ ہے کہ اس کے اندر پھوٹ نہیں ہے۔ اس کے تمام ذمہ داران ایک زبان میں بولتے ہیں ۔ اس ادارے پر مسلمانوں کی اکثریت کو اعتماد بھی ہے کہ جو کچھ یہ بورڈ کہے گا وہ ہندوستانی مسلمانوں کے حق میں ہوگا، مگرایسا لگتا ہے کہ ہندوستانی میڈیا کے زبردست دباؤ کی وجہ سے مسلم پرسنل لاء کے ذمہ داران بھی کنفیوژن کا شکار ہو کر ایسی باتیں کہہ رہے ہیں کہ جو عام مسلمان کے حلق سے نہیں اتر رہی ہیں ۔

 

Triple Talaq will be Counted as Talaq Uttered Three Times  !تین طلاق ہرحال میں تین ہی مانی  جائیں گی
Hafeez Nomani

کئی برس سے تین طلاق برابر ایک طلاق کا مطالبہ کیا جارہا ہے اچھے اچھے دین دار تعلیم یافتہ یہ مطالبہ پرسنل لا بورڈ سے کررہے ہیں کہ وہ تین طلاق کو ایک طلاق کے برابر قرار دے۔ ان کے خیال میں یہ پرسنل لا کے عالموں کو اختیار حاصل ہے کہ وہ تین کو ایک کردیں ۔ برس پر برس گذرگئے۔ بورڈ کی طرف سے کہا جارہا ہے کہ یہ انسان کے اختیار کی چیز نہیں ہے۔ حضور اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانہ میں بھی ایک مسلمان نے ایک ہی وقت میں تین طلاق دیدی تھی آقائے کائنات کے علم میں یہ بات آئی تو چہرۂ اقدس غصہ سے سرخ ہوگیا اور فرمایا کہ ابھی تو میں دنیا میں موجود ہوں اس کے باوجود اتنی غلط حرکت کرنے کی ہمت کرلی؟

 

اسلامی قانون اسلامی معاشرہ کا امتیاز ہے، اس سے بہتر قانون پیش نہیں کیا جاسکتا ہے ، تاہم اسلامی معاشرہ کا اس سے بھی بڑا امتیاز وہ اخلاقی تعلیمات ہیں جو رب حکیم کی طرف سے قانون کے ساتھ ساتھ عطا کی گئی ہیں۔ اسلامی قانون کی ساری آب و تاب انہیں سے ہے۔ ایمان و اخلاق کا ساتھ نہ ہو تو قانون بے روح اوربے کشش ہوکر رہ جاتاہے ۔ یاد رہے صرف قانون کی حکمرانی سے اسلامی معاشرہ ایک مثالی معاشرہ نہیں بن سکتا ہے۔ ایک پرکشش مثالی اسلامی معاشرہ کے لئے قانون سے پہلے اور قانون سے کہیں زیادہ ایمان و اخلاق کی حکمرانی ضروری ہے۔

 

حنفی ،اہل حدیث اور شیعی تینوں مسلکوں کے برخلاف میرا نقطہ نظر یہ ہے کہ قرآنی ہدایت کے علیٰ الرغم دی گئی طلاق خواہ ایک ہو یا زیادہ دو واقع نہیں ہوگی ۔ ایک مجلس کی تین طلاق کے بارے میں قارئین نے دیکھا کہ ائمہ کرام کی رائیں ایک دوسرے سے مختلف اور متضاد ہیں ۔ اس لیے دونوں رائیں عین شریعت قرار نہیں دی جاسکتی ۔ ورنہ لازم آئیگا کہ خدا کی کتاب اور اس کی شریعت میں تضاد بیانی پائی جاتی ہے۔ جو بہت بڑا نقص اور عیب ہے ۔ البتہ دونوں متضاد رائے رکھنے اور ماننے والے یعنی مقلداور غیر مقلد سبھی قسم کے علماء کا اس بات پر اتفاق ہے کہ ۔۔۔شوہر کومکمل اختیار ہے کہ وہ جب چاہے یکطرفہ طور پر لفظ طلاق بول کر نکاح کوختم کرسکتا ہے۔ اس معاملہ میں مسلم معاشرہ یا عدالت کودخل دینے کا کوئی حق نہیں ہے۔ مگرکوئی عورت نکاح کو ختم یا فسخ کرناچاہے تو اسے عدالت سے رجوع کرناپڑے گا ۔کیا اسے شرعی اور انصاف پر مبنی قانون قرار دیا جاسکتا ہے؟

 

ہمارے ان قدیم مدرسوں کاہی کمال تھا کہ سول سروسیزکے لیے افرادتیارہوتے تھے ۔پورے برصغیرکی سول سروس مدارس کے ہی فارغین پرمنحصرتھی۔علاقے کاکوتوال،خزانہ کامحافظ ،عدالتوں کے قاضی،عمارتوں کے انجینئر،تحصیل ،ضلع ،ڈویژن کے سارے ذمے داراورحکومت کے سارے محکموں میں یہی فضلاے مدارس کام انجام دیتے تھے ۔لال قلعے،تاج محل ،قطب مینارسمیت برصغیرکی شاہ کار عمارتوں کوبنانے والے کوئی اورنہیں انہی مدرسوں کے فارغ التحصیل تھے لیکن 1781کے بعدتاریخ نے جوپلٹاکھایاتومسلمان جودنیاکی قیادت کے لیے آئے تھے صرف اپنے مذہب تک محدودکردیے گئے اور انگریزآسانی سے ساری چیزوں پرحاوی ہوگیا۔

 

Different Country, Different Religion But the Same Mentality  ملک الگ، مذہب الگ مگر مزاج ایک
Shakeel Shamsi

ہندوستان اور پاکستان میں کئی برسوں سے ایک رواج چل پڑا ہے کہ مذہب کے نام پر ایک بھیڑ جمع ہوتی ہے او رجس کو قصووار سمجھتی ہے، اس کو قتل کردیتی ہے، یوں تو اس بھیڑ کا مذہب الگ ہوتاہے ملک بھی جدا ہوتا ہے لیکن بھیڑ میں شامل لوگوں کا مزاج بالکل ایک جیسا ہوتا ہے۔ مشتعل مجمع جس کو قتل کرناچاہتا ہے اس پر کبھی گؤ کشی تو کبھی لڑکی کی چھیڑ نے کا الزام لگاتا ہے۔ کبھی یہی بھیڑ مذہب کی اہانت کرنے کے نام پر اور کبھی دھرم کے توہین کرنے کے نام پر کسی کو مار دیتی ہے۔ ہندوستان میں پہلو خان کو انتہا پسندوں کی ایک بھیڑ قتل کردیتی ہے توپاکستان کے مردان شہر میں مشعل خان نام کے مسلم نوجوان کو قتل کر کے اس کے کنبے میں انتہا پسند ی کی مشعل سے اندھیرا کردیا ہے۔

 

Recent Elections and the Muslim Ummah  حالیہ انتخابات اور امت مسلمہ
Maulana Jalaluddin Umri

اس الیکشن میں آپ نے دیکھا ہوگا کہ صرف مایاوتی نے بار بار مسلمانوں کا نام لیا۔ اور اٹھانوے (98) افراد کو اپنی پارٹی کا کنڈیڈیٹ بنا دیا، یہی چیز ان کے گلے کی ہڈی بھی بن گئی ۔ وہ کہتی رہیں کہ مسلمان اور بی ایس پی کے جو حمایتی طبقات ہیں مل کر حکومت بنالیں گے لیکن اس کا الٹا ہی اثر ہوا۔ اس کے علاوہ کسی پارٹی نے مسلمانوں کا نام تک لیناپسند نہیں کیا۔ پورے الیکشن میں اکھلیش او رراہل نے کہیں یہ نہیں کہا کہ مسلمانوں کا یہ مسئلہ ہے اسے حل ہونا چاہیے ۔ اس کی وجہ یہی ہے کہ وہ سوچتے ہیں کہ ایسا کرنے سے اکثریت کے ووٹ سے محروم ہوجائیں گے ۔ ان کے مسائل کا ذکر کریں گے تو لوگ سمجھیں گے کہ ہم ان کے حامی ہیں ۔ آپ کے حق میں کوئی کلمۂ خیر بھی کہتا ہے تو لوگ سمجھتے ہیں کہ وہ مسلمانوں کا حامی ہے۔

 

اسلام ایک عالمگیر مذہب ہے ، اس میں انسانی زندگی کے تمام شعبہ ہائے حیات کا واضح او رجامع حل موجود ہے ، اسلام نے جہاں انفرادی زندگی کے متعلق انسان کی رہنمائی کی ہے وہیں اجتماعی اور معاشرتی زندگی کے تعلق سے بھی کچھ ہدایات اور تعلیمات دی ہیں، اگر انسان ان تعلیمات و ہدایات کو اپنائے تو ایک خوشگوار اور صالح معاشرہ تشکیل پائے گا ، اور ساتھ ہی ساتھ انسان دنیا اور آخرت کی سعادت و کامیابی سے بہر ہ ور ہوگا ۔ اجتماعی اور معاشرتی زندگی کے تعلق اسلام سے بنیادی طور پر یہ ہدایت دیتا ہے کہ انسان اس طرح زندگی گزارے کہ اس کے قول و فعل اور حرکاتوسکنات سے کسی کو ٹھیس نہ پہنچے ، اس کی طرز معاشرت اور رہن سہن کسی کی دل آزاری کا باعث نہ بنے ، ایک حدیث شریف میں آپ نے کامل و مکمل انسان اس شخص کو قرار دیا ہے۔

 

موجودہ دور میں مسلمان ملک میں جن حالات سے گذر رہے ہیں یہ سب ہمارے اعمال کا نتیجہ ہے ہم نے دور اندیشی سے کام لیا ہوتا حکمت سے کام لیا ہوتا یا ان مفکروں کی باتوں کو قبول کیا ہوتا تو آج یہ دن دیکھنے کو نہیں ملتے ہم جذباتی علماؤں کے پیچھے بھاگتے رہے جو صحیح طریقے سے رہنمائی نہیں کی جن حالات کا ہم آج سامنا کررہے ہیں جن واقعات کے ہم چشم دیدہ گواہ ہیں وہ یکایک نہیں آئے بلکہ اس کے پیچھے کچھ جماعتیں اور تنظیمیں کئی دہوں سے مسلسل کام کرتی رہی ہیں جس کا نتیجہ آج بر آمد ہورہا ہے ہوسکتا ہے یہ شروعات ہو کیونکہ ملک کی اکثریت ان تنظیموں سے نہیں جڑی ہے اور اتفاق بھی نہیں کرتے ہیں جس دن وہ بھی ان کے ساتھ مل جائیں گے ملک کے حالات بد سے بد تر ہوسکتے ہیں ابھی تک جو ان کے ساتھ نہیں ہیں مسلمان ان کو اپنا دوست بنالیں اوران کا دل جیتیں دل جیتنے کے لئے کچھ قربانی بھی دینی پڑے گی اس میں ایک قربانی گاؤ کشی بھی ہوسکتی ہے۔

 

اسلام کو ایک جارح مذہب اور مسلمانوں کو دہشت گرد قوم قرار دینا اسلام کے محکم اصولوں سے بے خبری کی دلیل یا دیدہ و دانستہ تنگ نظری کی بدترین مثال ہے۔ اسلام ہمیشہ مذہبی تقدس اور قومی تشحص و امتیاز ، انسانیت نوازی برقرار رکھنے کے لئے عمل پیہم او رجہد مسلسل کی اجازت ضرور دیتا ہے اور تبلیغ وہدایت کی ہر ممکن راہ کو خوش اسلوبی کے ساتھ طے کرنے کی تعلیم پر زور دیتا ہے۔ اللہ تعالیٰ نے ( سورہ النحل ) میں فرمایا ’’ اے نبی اپنے رب کے راستے کی طرف حکمت اور عمدہ نصیحت کے ساتھ دعوت دو اور لوگوں سے مباحثہ کروایسے طریقہ پر جو بہترین ہو‘‘۔

 

Triple Talaq, Indian Constitution and Counter-Affidavit Filed by Muslim Personal Law Board  طلاق ثلاثہ ، آئین ہند اور مسلم پرسنل لابورڈ کا جوابی حلف نامہ
A Rahman

آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ نے اس معاملے میں ضروری فریق بننے یعنی (impleadment) کی درخواست گزاری ، جسے سپریم کورٹ نے منظور کرتے ہوئے بورڈ کو جوابی حلف نامہ پیش کرنے کی اجازت دے دی۔ سائرہ بانو کی تینتیس (33) صفحات پر مشتمل عرضی کے جواب میں مسلم پرسنل لا ء بورڈ نے ستر (70) صفحات کا جو جوابی حلف نامہ فائل کیا ہے ، اسے پڑھنے کے بعد آئین ہنداور اسلامی قوانین یا ان میں سے کسی ایک کا علم رکھنے والا شخص سوائے سر پیٹنے اور کفِ افسوس ملنے کے او رکچھ نہیں کرسکتا ۔ بطور قانونی دستاویز یہ حلف نامہ قطعی پھسپھسا اور نا قابل اعتنائے عدالت تو ہے ہی، ایسے متضاد بیانات کا حامل بھی ہے جن کے سلسلے میں عدالت کے ذریعے پوچھے جانے والے ممکنہ سوالات کا کوئی وکیل نہ جواب دے سکے گا اور نہ ہی ان تضادات کی تصریح و توضیح کر پائے گا۔

United Nations and the Question of Quran’s Interpretation  اقوام متحدہ اور قرآن مجید کی تشریح کا سوال
Mashari Althayadi

کسی بین الاقوامی عہدہ دار کی جانب سے یہ ایک اچھا اظہاریہ تھا۔وہ عیسائی ہیں اور اس کے باوجود انھوں نے اسلامی عقیدے کی تعریف کی ہے لیکن اقوام متحدہ کا مشن اس طرح کے علامتی اظہاریوں تک ہی محدود نہیں رہنا چاہیے بلکہ اقوام متحدہ کو امن اور انصاف کی بحالی کے لیے سنجیدہ اقدام کرنا چاہیے کیونکہ جہاں کہیں انصاف اور رحم دلی کا بول بالا ہوگا،اللہ کے دین کا بھی غلغلہ بلند ہوگا۔ اس کے لیے تشریحات کے سمندر میں غوطہ زن ہونے کی بھی ضرورت نہیں ہو گی۔یہ ایک مشکل امر ہے اور اس کے لیے بہت مہارت کی ضرورت ہے۔

 

عام طور سے یہ خیا ل کیا جاتا ہے کہ  ہندوستا ن میں مسلمانوں کی آبادی محمد غوری کے حملوں کے بعد شروع ہوئی ۔ یہ خیال غلط ہی نہیں گمراہ کن بھی ہے ۔ محمد غوری کے حملے سے قبل (یعنی ہندور اجاوں کے عہد حکومت میں ) ہندوستان میں متعدد جگہ مسلمانوں کی نو آبادیات تھیں جہاں ان کے مدرسے، خانقاہیں اور دینی ادارے قائم تھے ۔ جو لوگ دینی اداروں کی تشکیل و تعمیر کی حوصلہ شکن مشکلات کا تھوڑاسا بھی تجربہ رکھتے ہیں وہی ان مصائب کا بھی اندازہ لگا سکتے ہیں جن سے ان بزرگوں کو دوچار ہونا پڑا۔ اجمیر کے علاوہ جہاں خواجہ معین الدین نے پرتھوی راج کے زمانے میں اپنی خانقاہ بنائی تھی ، بدایوں ، قنوج ،ناگور اور بہار کے بعض شہروں میں مسلمانوں کی خاصی آبادی تھی ۔ بنارس (ہندو) یونیورسٹی کے ایک پروفیسر ڈاکٹر آریس ترپاٹھی نے قنوج کے متعلق حال ہی میں ایک کتاب شائع کی ہے جس میں بتایا ہے کہ قنوج میں مسلمانوں کی حکومت کے قائم ہونے سے قبل مسلمان موجود تھے ۔ بہار کے متعلق بھی جدید تحقیقات یہی ہیں کہ محمد بن بختیار خلجی کی فتح (۱۱۹۹) سے قبل وہاں صوفیا  اور بزرگان دین پہنچ چکے تھے-

Ayodhya Dispute  اجودھیا تنازعہ
Syed Mansoor Agha

اس عقیدے کو پروان چڑھانے کا سیاسی عمل آزادی کے فوراً بعد ہی اس وقت شروع ہو گیا تھا جب 22 اور23دسمبر1948کی رات میں چبوترے سے اٹھاکر مورتیاں مسجد کی محراب میں رکھ دی گئیں اور6دسمبر1992کو اس وقت شباب پر پہنچا جب آڈوانی جی، اشوک سنگھل اوردیگرسنگھی لیڈروں کی پکار پر لاکھوں قانون شکن اجودھیا میں جمع ہوگئے اورا ن لیڈروں کی موجودگی میں ایک قدیم عبادت گاہ کو مسمار کردیا گیا اورپھرسرکارکی نگرانی میں اس کے ملبہ پر عارضی ہی سہی، مندربنادیا گیا۔اس دوران کس کس کا کیارول رہا؟ یہ بتانے کی ضرورت نہیں۔ جب مورتیاں رکھی گئیں تب بھی کانگریس کی سرکارتھی۔ جب تالا کھلا تب بھی، جب شیلانیاس ہوا تب اورجب مسجدگرائی گئی تب بھی سرکار کانگریس کی ہی تھی۔

 

دنیا کی نظر سے یہ حقیقت بھی پوشیدہ نہیں ہے کہ وہابی فرقہ کی جماعت الدعوہ ۔۔۔ حرکت المجاہدین ۔۔۔سپاہ صحابہ ۔۔۔۔ لشکر طیبہ ۔۔۔۔۔۔ القاعدہ ۔۔۔۔۔۔ لشکر جھنگوی ۔۔۔۔۔۔ جیش محمد ۔۔۔۔۔ اور  دیگر دہشت گرد تنظیموں  کے متعلق آج تک دیوبندی اور اہل حدیث جماعتوں کی طرف سے یہ اعلان کبھی نہیں کیا گیا کہ مذکورہ دہشت گرد جماعتیں جہاد کے نام پر فساد اور تباہی پھیلا کر بے گناہوں کا قتل عام کرتے ہوئے اسلام اور مسلمانوں کو بدنام کرہی ہیں ۔ اس لیے مسلمان ان دہشت گرد مولویوں اور ان کی دہشت گرد جماعتوں سے کسی بھی طرح کا کوئی رشتہ اور تعلق قائم نہ کریں  ۔

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • Dear Ghulam Muhiuddin Sahab, What you say is so patently obvious that any person who believes Qur'an to be divine speech ....
    ( By muhammd yunus )
  • A very well written article "it is compassion towards others and good deeds " that are the markers of the strength of faith..but who will ...
    ( By awaya )
  • Dear Zuma, You did not answer the question: ‘And how much pluralism does islam offer to atheists, agnostics, kafirs and Mushrikeen and pagans ....
    ( By muhammd yunus )
  • Dear Zuma, I endorse your statement that from the Qur’anic perspective, “Allah accepts non-Muslims whether they are Jews or Christians ....
    ( By muhammd yunus )
  • Quran calls Muslims to believe in Allah. Who is Allah? Allah is the creator of all human beings. The following are the supporting quranic ...
    ( By zuma )
  • As Allah accepts non-Muslims whether they are Jews or Christians or other religions as long as they ...
    ( By zuma )
  • I do not question Sharmaji's wisdom but we must be aware that he has a clearly atheistic agenda.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • While the basic Quranic ethics remain eternally valid, the legal or quasi-legal commands derived....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • I fully agree.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Our goal for frequency of triple talaq must be an emphatic 0%.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Kafir most certainly does not mean either disbeliever or infidel in the sense in which the Quran uses the word....
    ( By Naseer Ahmed )
  • Qazi Saheb, the term "Kafir" can also be translated as "Oppressor" or "Religious Oppressor", in view of Naseer Saheb's comprehensive delving into its ...
    ( By Sultan Shahin )
  • Dear Mr. Ashok Sharma, you seem to have a much better understanding than most Muslims of what Islam's role should be in contemporary times. I ...
    ( By Sultan Shahin )
  • recent duly approved exegetic publication, Essential Message of Islam, demonstrates as below that the Qur'an recommends monogamy as the social norm:...
    ( By muhammd yunus )
  • Polygamy negates the Constitutional principle of gender equality. It is an unfair assault on the rights ...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • And how much pluralism does islam offer to atheists, agnostics, kafirs and Mushrikeen and pagans and ....
    ( By shan94 )
  • It is not surprising that the letter allegedly published some 15 years ago is not answered for it has a long list of sensitive questions. ...
    ( By muhammd yunus )
  • Quran only promises those Muslims who do good deeds to paradise even of those who do evil deeds. The following is the extract: (سورة البقرة, ...
    ( By zuma )
  • Quran 2:62 mentions that Jews, Christians, and Sabians, who believes in Allah and the Last Day and does righteous deeds will have their reward with ...
    ( By zuma )
  • Inequality in what has come to be known as personal laws exists across all religious...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • "Will you then compel mankind, against their will, to believe?” (Q10:99). Words that are so clear and yet so forgotten!....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • New idea is a "bidyat," and they r kafir only No matter from where he is. This world...
    ( By Syed Javed Jafar )
  • Such atrocities only tell us how far we are from what we call 'civilisation
    ( By Meera )
  • Chapar ganju...hindu hindu karta firta hai. Khud ka dharm to pata nahi Aur Islam pe unlngli uthata hai.ek baat kah dun jispe tum ungli uthare ho ...
    ( By Tarik Ahmad )
  • Appeal Ka Asar hooga'
    ( By ASLAM QURAISHI )
  • Dear Sheik Aftar Ali, It appears to me that you have not read the article closely. I have not talked about ....
    ( By muhammd yunus )
  • It is true “An examination of the foundations of the Islamic faith shows respect for Christianity” Koran 5:82 states as follows “And you will find the nearest ...
    ( By Royalj )
  • This is to express ones disgust at this sordid affair generated by blasphemy law anywhere in Muslim world! Historically Muhammad the Messenger of God during his ...
    ( By Rashid Samnakay )
  • Quran 2:11 is applicable to Muslims as well as non-Muslims since it mentions that Muslims should not make mischief on ....
    ( By zuma )
  • I had meant the following comment to be posted in "Islamic World News" section. Sorry!
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Quran 2:220 demands Muslims to deal justly and instead of deceitfully. The following is the extract: (سورة البقرة, Al-Baqara, Chapter #2, Verse #220)-Mohsin ...
    ( By zuma )
  • Ok then u accept the salafi or shia ideology
    ( By Sheik Aftar Ali )
  • Respected - dear AIMPLB see how our indian muslims will think differently and identify indian muslim and how integrate all indians. any language - dress ...
    ( By Kolipaka Sudeep Kumar )
  • Proofs please. Some anonymous old man (no name), some anonymous young men (no names), police complaints withdrawn (no FIR records). The name of the....
    ( By Unmai Virumbi )
  • Quran 2:204-205 support the same that Allah dislikes Muslims to make mischief on the earth. The following are the extracts: (سورة البقرة, Al-Baqara....
    ( By zuma )
  • I completely disagree with this statement"The so called fringe is perhaps not the fringe at all; it actually tells us how the majority within this ...
    ( By awaya )
  • Does Allah loves the just? Allah certainly loves the just. Or else, Allah would not mention the phrase, Make not mischief ....
    ( By zuma )
  • Dear Muhammd Yunus, You have mentioned in your comment about Allah does not forbid Muslims to be virtuous and just to those Muslims who ...
    ( By zuma )
  • Blasphemy laws must be abolished. They are in-Islamic.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • The New York Times has published one editorial, three op-eds and two news stories on Farooq Ahmed Dar's photo already!​ I am sure this does ...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )