FOLLOW US:

Books and Documents
Urdu Section

Marriage With a Woman of  the Books in Context of Inter-Religious Marriages بین مذاہب شادی کے تناظر میں اہل کتاب عورت سے نکاح
Maulana Abdul Hameed Nomani
اسلام صرف طرز حیات اور نظام زندگی  ہی نہیں بلکہ ابدی عقیدہ بھی ہے کہ اس کے مطابق ختم ہونے والی ابدی  زندگی کے انجام کا انتہائی حد تک سنجیدہ مسئلہ بھی ہے ، بین مذاہب شادی  کے تناظر میں اہل کتاب یہودی، عیسائی خاتون سے شادی کے معاملے کو بھی مسلم سماج اپنے مخصوص تصور حیات سے الگ کر کے نہیں دیکھ سکتا ہے ، وہ مذہبی حوالے سے اپنے دین و شریعت سے ملی اجازت اور جواز سے بوقت ضرورت فائدہ تو اُٹھا سکتاہے ، لیکن نظریے اور بنیادی تصور اور اصول حیات کو خطرے میں نہیں ڈال سکتا ہے

 

Reclaiming Jerusalem’s lost legacy   یروشلم کے گم شدہ ورثہ کا مطالبہ
Saif Shahin New Age Islam

نصف  صدی سے بھی زیادہ سے مسلم اور  یہودی یروشلم کے لئے لڑ رہے  ہیں  ۔ دونوں یہ دعویٰ کرتے ہیں کہ یہ ان کے مقدس ترین شہروں میں  سے  ایک ہے  ، اور ان دونوں  کے پاس اپنے دعووں کی حمایت میں آثار قدیمہ اور فن  تعمیرات  پر مبنی ثبوتو ں  کا ایک مجموعہ ہے ۔ ان دونوں میں سے کوئی ایک بھی دوسرے کی تردید نہیں کرتا ہے ؛  اس دعویٰ کی  وجہ سے جو  یہودیوں نے اس پر کیا ہے ، جزوی  طور پر وہ مسلمانوں کے لئے اتنا ہی  مقدس ہے  ۔  اب تک ان میں سے ہر ایک بلا شرکت غیر اس پر اپنا  م حق چاہتے ہیں ۔

 

Need to introduce vocational courses in Madrasas  دینی مدارس میں حرفہ جاتی تعلیم کی ضرورت
Prof. Akhtarul Wasey

مدارس کے طلبہ کو اگر کمپیوٹر ، گھڑی سازی، موبائل رپیئرنگ ، پلمبنگ ، بجلی کا کام یا اسی طرح کے دوسرے کام اور ہنر سکھادے جائیں تو مدارس کی چہار دیواری سےنکلنے کے بعد وہ صرف قومی چندوں پر ہی منحصر نہیں رہیں گے ۔ ان کے اندر خود انحصاری اور عزت نفس کا مزاج پیدا ہوگا ۔ او رسماجی سطح پر ان کی قدرو منزلت او روقار میں اضافہ ہوگا۔ بہر حال مدارس میں حرفہ جاتی تعلیم کی شمولیت وقت کا ایک اہم تقاضا ہے۔

 

Muslims and Their Conspiracy Theories  مسلمان اور ان کی سازشی تھیوری
Aiman Reyaz, New Age Islam

ہم بھی اپنی کوتاہی کا ذمہ دار خود  کو ٹھہرانا نہیں چاہتے  ، یا   ان  مفسد انہ اور بزدلانہ  اعمال  کی ذمہ داری  قبول نہیں کرنا چاہتے جن کا ارتکاب ہمارے درمیان رہنے والے لوگ کر ہے ہیں ۔ ہم یہ یقین نہیں کرنا چاہتے کہ ہم کامل نہیں نہیں ہیں ، اسی لئے  ہو سکتا ہے کہ ہم غلط ہوں ۔ اسی لئے ہم آسانی کے ساتھ اپنی غلطیوں کا ‘‘ دشمن ’’ کو ذمہ دار ٹھہراتے  ہیں جیسا کہ 9/11 کے واقعہ میں ہوا ، اور کبھی ایسے معاملات میں  ہم ایسا کرتے ہیں جس میں دوسروں پر الزام کی صورت ہی نہیں بنتی جیسا کہ  سونامی کے واقعہ میں ہوا ۔

 

A Brazen Rise in Islamic fanaticism   اسلامی متشددوں میں بے غیرتی کے ساتھ بغاوت  : الشباب صومالیہ سے عیسائیوں کا خاتمہ چاہتے ہیں
Aiman Reyaz, New Age Islam

قابل توجہ بات یہ ہے کہ حرکت الشباب المجاہدین (HSM)،صومالیہ کی ایک انتہائی منظم دہشت گرد تنظیم ہے ۔صومالیہ کی مشہور ڈاکہ زنی ،ہتھیاروں کی خریدو فروخت،انسانوں کی اسمگلنگ اور وہاں کی  دہشت گردی زبان زد عام وخاص ہے ۔ الشباب القاعدہ سے مل کر صومالیہ سے عیسائیوں کا صفایاکرنا چاہتے ہیں ، خاص طور سے ان عیسائیوں کا جو پہلے مسلمان تھے ۔صومالیہ کی کمزور عبوری حکومت جسے افریقی یونین کی قیام امن فوج کی حمایت حاصل ہے،دارالحکومت کے باہر اس اٹھتے ہوئے طوفان کو روکنے کی کوشش کرنے میں ناکام ہے اور اس پر اسلامی بلائیوں کےذریعہ ڈھائے جا نے کا خطرہ منڈلا رہا ہے ۔

 

کرسمس کی مبارکبا د کے خلاف طالبان کا فتویٰ غیر اسلامی ہے

نیو ایج  اسلام اپنے عیسائی  برادران کو کرسمس کی مبارکباد پیش کرتاہے

ہمارے  قارئین  غیر مسلموں کے قتل کی حمایت میں طالبانی فتوے کو پڑھ چکے ہیں ۔ ہم نے اسکی تردید بھی  شائع کی ہے۔ طالبان کی طرف سے ایک اور فتویٰ جاری کیا گیا ہے جس میں مسلمانوں کو  عیسائیوں  (اہل کتاب ) کو کرسمس کی مبارکباد دینے سے منع کیا گیا ہے اور اسے حرام اور غیر شرعی عمل قرار دیا ہے۔ یہ انکی طرف سے اس تکثیری سماج میں  مسلموں اور عیسائیوں کے درمیان  تفرقے کو بڑھاوا دینے کی ایک اور کوشش ہے۔ اس طرح کے فتاوی نفرت کو فروغ  دیتے ہیں اور مسلمانوں کو ایک ایسی قوم کی حیثیت سے پیش کرتے ہیں  جو فرقہ وارانہ ہم آہنگی ،  بین مذہبی ثقافتی تبادلے اور افہام و تفہیم  میں یقین نہیں رکھتی  جس پر قر آن  میں زور دیا گیا ہے۔ پیغمبر اسلام ﷺ غیر مسلموں کے تحائف اور دعوت قبول فرما تے تھے۔مسلم معاشروں میں  اس طالبانی نظرئیے اور ذہنیت  کی جڑیں کتنی گہری ہو چکی ہیں اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ انڈونیشیا  میں مذہبی حلقوں کی طرف سے امسال مسلمانوں کو عیسا ئیو ں کو کرسمس کی مبارکباد دینے سے منع کیا گیا ہے ،انکی دعوت قبول کرنا اور انکی خوشی میں شامل ہونا تو دور کی بات ہے۔حتی ٰ کہ انہوں نے   وہاں کے صدر سے قومی کرسمس جشن میں شامل نہ ہو نے کی درخواست کی ہے جبکہ ایک تکثیری ملک کے صدر کی حیثیت سے انہیں شامل ہونا چاہئے۔ لہذا، یہ واضح کہ یہ طالبانی فتاوی  دور رس اثرات کے حامل ہیں  اور اس ذہنیت کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کی جانی چاہئے اور اجتماعی طور پر اسکا مقابلہ کرنا چاہئے۔

آخر میں ہم اپنے  تمام اہل کتاب برادران کو کرسمس کی  مبارکباد پیش کرتے ہیں اور نئے سال میں انکی سلامتی  اور خوشحالی کے لئے دعا گو ہیں۔ہم  یہاں نوائے افغان جہاد میں شائع شدہ مضمون کی نقل پیش کر رہے ہیں اور اپنے قارئین سے درخواست کرتے ہیں کہ وہ اس پر اپنی رائے کا اظہار کریں۔۔نیو ایج اسلام ایڈٹ ڈیسک

 

Taliban fatwa against ‘Merry Christmas’ has far reaching consequences

New Age Islam wishes Christians a Merry Christmas!

Dec 24, 2012

Our readers have gone through the Taliban’s fatwa justifying the killings of non-Muslims published in their mouth-piece Nawa-e-Afghan Jihad. We have published the refutations of it. In yet another fatwa on the issue of extending greetings to Christians (ahl-e-Kitab) on Christmas, they have declared saying ‘Merry Christmas’ to Christians haram and un-Islamic. This is another attempt at creating rifts between Muslims and Christians in a multicultural society. Fatwas like this only promote hatred and present Muslims as a community that does not believe in communal harmony and interfaith cultural exchanges and dialogue which the Quran encourages and emphasises. The holy Prophet (PBUH) accepted invitations and gifts from non-Muslims and stood by them in their joy and sorrow.

This Talibani ideology and mindset has taken deep roots in all Muslim societies. This is evident from the fatwa issued by ulema from a section of religious community in Indonesia and other Muslim countries urging Muslims not to say Merry Christmas to the Christians, not to speak of accepting their invitations to their festivities. In Indonesia they have even asked the President not to attend the national Christmas celebrations which he should do as the President of a multi-religious country. The Taliban fatwa, therefore, seems to have far-reaching consequences and this mindset has to be condemned in the harshest possible terms and fought collectively. At the end, we wish all our ahl-e-kitab Christian brethren a very happy Christmas and pray for their well being and prosperity in the New Year. We are producing the article published in the Nawa-e-Afghan Jihad so that Muslims may be aware of what is going on their society. Now when they hear these same arguments from a seemingly well-educated, even westernised liberal, they can judge where these arguments are coming from, sometimes even without the express understanding of the speaker. We hope readers will express their views on it. -- New Age Islam Edit Desk

 

بہت سارے مسلمانو ں اور غیر مسلموں کے ذریعہ لفظ  ‘‘شریعت ’’  کو  غلط سمجھا گیا ہے اور اکثر اس کے تصور کو صرف  جرائم سے متعلق  قانون تک ہی محدود رکھا جاتا ہے  ۔ شریعت کے اسی محدود تصور نے اسلام کی خوبصورتی اور اس کی اہمیت و افادیت کو  ختم کر دیا ہے ۔عام طور پر مسلمان ہونے کی حیثیت سے اور خاص طور پر  امریکی مسلمان  ہونے  کی حیثیت سے ہمارے لئے  ہمارے شریعت کا  جاننا ، اس کی خصوصیات کا  جاننا  ، ان اقدار کا جاننا جن کی وہ حمایت کرتا ہے   اور  ان اہداف کا جاننا  جن کا حصول اس  کا مقصد ہے ،  ضروری ہے ۔ اس سلسلہ  وار تحریر  کا مقصد  شریعت اور فقہ کی تعریف  اور ان کے درمیان تعلق   پر کچھ روشنی ڈالنا ہے ۔

 
Miracles in the Quran قرآن مقد س میں معجزات
ایمن ریاض، نیو ایج اسلام

Miracles in the Quran  قرآن مقد س میں معجزات
Aiman Reyaz, New Age Islam

قرآن مقدس ایک ایسی آخری  آسمانی کتاب ہے جو آخری پیغمبر محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر نازل ہوئی  ۔ کسی بھی کتاب کے بارے میں یہ دعویٰ کرنے کے لئے کہ یہ خدا کی جانب سے  ایک الہامی کتاب ہے، اسے  وقت کی کسوٹی پر کھرا اترنا  چاہئے ۔ گزشتہ زمانہ معجزات کا زمانہ تھا ؛قرآن معجزات کا معجزہ ہے ۔ اس کے بعدزبان و ادب کا زمانہ آیا ،مسلم اور غیر مسلم دونوں کا یہ کہنا ہے کہ قرآن روئے زمیں پر اس زمانے کی  سب سے عمدہ کتاب ہے  ۔ اور آج  کا  دور سائنس اور ٹیکنالوجی کا دور ہے ۔ آئے دیکھتے ہیں کہ کیا قرآن  کو حقیقتاً ایک الہامی کتاب سمجھا جاسکتا ہے۔

 

New Age Islam May Suddenly Go Offline   نیو ایج اسلام کسی بھی وقت تعطل کا شکار ہو سکتا ہے: اگر ایسا ہوتا ہے تو انشاء اللہ ہم جلد ہی واپس ہوں گے ؛ برائے مہربانی ہمارے ساتھ جڑے رہیں
Sultan Shahin, Editor, New Age Islam

تقریباً پانچ سال پہلے ہم نے جب اپنے سفر کا آغا ز کیا ،  تب سے ہمارے اوپر حملے ہوتے رہے ہیں ۔ سب سے  پہلے ہماری سائٹ کو ہیک کرنے کی مسلسل کوشش کی گئی ۔ اس کے بعد ہمارے نیوز لیٹر  میلنگ  سسٹم(newsletter mailing system) پر بے شمار مرتبہ حملے کئے گئے ۔ ایک مرتبہ ہماری سائٹ کو  سرور (server)سے ایسے  وقت  میں   برباد کر دیا گیا جب ہم ایسے حالات کا سامنا کر نے کے لئے تیار نہیں تھے ۔ اب میرے ویب ہوسٹ کے ذریعے  مجھے یہ اطلاع ملی ہے کہ  شکایات کے  ایک اور مجموعہ  کی بنا پر  یہ سائٹ معطل کیا جا چکا ہے اور یہ کسی بھی وقت ختم کیا جا سکتا ہے  ۔  یہ اطلاع تعطل کے 15 دنوں کے بعد  میرے ان باکس (inbox) میں  آئی   ۔ 

 

The Truth behind Taliban's Fatwa Justifying Killings of Innocent Civilians Part-9  نوائے افغان جہاد فتویٰ اور اسکی حقیقت ۔(قسط۔9)
اس کا جرم صرف یہ تھا کہ وہ  طالبان کے ذریعہ لڑکیوں کی تعلیم پر پابندی اور لڑکیوں کے اسکولوں کو بند کروانے کے خلاف غیر متشدد مہم چلا رہی تھی ۔ لہٰذا ، اس مخالفت کی سزا کے طور پر طالبان نے اس کے قتل کا فیصلہ کرلیا ۔ چونکہ ملالہ بھی مسلمان ہی ہے اس لئے اس کے قتل کا جواز طالبان کو تلاش کرنا اور اسے اس قتل کو اسلامی شریعت کے مطابق جائز ٹھہرانا تھا لہٰذا ، اس کو امریکہ کا جاسوس قرار دینا ضروری تھا ۔ اس صورت میں طالبان کے ملاّ العبیری نے اس کے قتل کے لئے علما ء کا یہ قول نقل کیا ہے کہ   ‘‘ عورتوں ، بچوں اور بڑی عمر کے لوگوں کا قتل ایسے وقت میں جائز ہے کہ جب وہ لڑائی میں اپنی قوم کی کسی بھی قسم کی اعانت کریں ۔’’

 
ڈاکٹر سویتا کی موت میں مذہب کاحوالہ
M. Abdul Hameed Nomani مولانا عبدا لحمید نعمانی

ڈاکٹر سویتا کی موت میں مذہب کاحوالہ
Maulana Abdul Hameed Nomani

شکم میں بچے کی زندگی غیر یقینی اور وہ بذات خود غیر مشاہد ہے، اس لیے اس کی خاطر ایک اور یقینی (ماں) کی زندگی کو ختم کیا جائے گا ۔ مذہب ایسی حالت میں مشاہد او رماں کی یقینی زندگی کو ختم کرنے کی اجازت نہیں دے سکتا ہے، خاص طور اسلام جیسا فطری او ر معقول مذہب انسانوں کو زندگی اور اس کو بچانے کے لئے آیا ہے نہ کہ ختم کرنے کے لئے ۔ غیر یقینی اور یقینی زندگی میں فرق کرنا بھی عقل کا تقاضا ہے ۔ دونوں زندگی میں فرق اور ترجیح کا لحاظ ضروری ہے۔ اگر کسی مذہب میں اس کا لحاظ نہیں ہے ، تو سمجھنا چاہئے کہ وہ از کار رفتہ ہوکر اپنا سماجی اور انسانی رول کھو چکا ہے ۔

 

The Truth behind Taliban's Fatwa Justifying Killings of Innocent Civilians Part-8نوائے افغان جہاد فتویٰ اور اسکی حقیقت ۔(قسط 8
‘‘ سو جس نے جنگ جوؤں سے مّمیز نہ ہونے کی وجہ سے معصوم لوگوں کے قتل کی اجازت دی تو وہ ان حملوں کے نتیجے میں قتل ہونے والے افراد کے قتل  کو بھی جائز قرار دے گا ۔ کیونکہ وہ بھی اسٹراٹجک مراکز میں نہیں پہچا نے گئے ۔’’ یہ واضح ہےکہ ورلڈ ٹریڈ سنٹر میں فوجی نہیں تھے بلکہ غیر محارب افراد تھے اس لئے ان کے محارب افراد سے ممیز نہ ہونے کا سوال ہی کہاں اُٹھتا ہے ۔

Demand for Human Rights Declaration Necessary حقوق انسانی کے اعلامیہ کا مطالبہ ضروری
Tariq Anwar
انسانی حقوق کی اتنی واضح صراحت کے باوجود آج جس قدر ہندوستان میں انسانی حقوق کی پامالی ہورہی ہے، اس کے نتائج مستقبل میں  کسی بھی نظریے سے ملک کے لیے بہتر نہیں کہے جائیں گے۔ انسانی حقوق کا تحفظ کر کے ملک کے 99 فیصد مسائل پر نہ صرف بہ آسانی قابو پایا جاسکتاہے ، بلکہ ایک ایسی فضا اور ایک ایسے معاشرے کی تشکیل بہ آسانی کی جاسکتی ہے، جہاں صرف اور صرف امن و امان اور شانتی کا ہی دور دورہ ہو۔

 

Muhammad: The Greatest Reformer  محمد:تاریخ میں سب سے بڑے مصلح اور انتہائی با اثر شخصیت
Aiman Reyaz, New Age Islam

محمد (صلی اللہ علیہ وسلم )نے سماجی اصلاح کے لئے کام کیا ؛ انہوں نے منتشر عرب قوم کو ایک اہم جماعت میں تبدیل کردیا ۔زکوٰۃ کے نظام نے انہیں مالی تحفط فراہم کیا ، وہ تمام جنگ کے وقت میں متحد تھے اور وہ تمام اس بات میں یقین رکھتے تھے کہ اللہ کے علاوہ کوئی معبود نہیں ہے ۔ لوگ آج بھی  ان  سے  اور ان کی  تعلیمات سے  متاثر ہیں ۔ مسلمان مجموعی طور پر شراب نہیں پیتے ، قمار بازی نہیں کرتے ، ایک دن میں پانچ مرتبہ نماز پڑھتے ہیں اور زکوٰۃ ادا کرتے ہیں ۔ ہر معاشرے میں کچھ بدمعاش ہوتے  ہیں لیکن مجموعی طور پر  اکثر مسلمان  اس انسان کی اقتدا ء کرتے  ہیں ۔ اگر  چہ ہم جو دیکھ رہے ہیں وہ عمداً ناقص  تعلیم  کی  وجہ  سے ہے  کہ مسلمان اس بارے  میں  تذبذب کا شکار  ہیں کہ کیا  کیا جائے  اور کس کی پیروی کی جائے ؟

 
Religious Fanaticism مذ ہبی جنونیت
Hussain Amir Firhad حسین امیر فرہاد

ہماری مسجدوں میں جو آئے دن دھماکے ہوتے ہیں او رکچھ نمازیوں کو باجماعت اڑا دیتے ہیں اور ذمہ دار یہ کہہ کر بری الذمہ ہوجاتے  ہیں کہ اس میں بیر ونی  ہاتھ ہوگا ۔ ایک زمانہ تھا کہ مسجدیں امن کا گہوارہ ہوتی تھیں آج مخالف کو ٹھکانے لگانے کے لئے مسجد سے بہتر جگہ کوئی او رنہیں ۔ اگر مذہبی اجارہ اداروں  نے  اپنا رویہ نہ بدلا تو ایک دن مسجد یں ویران ہوجائیں گی۔

 

Muhammad: The Most Misunderstood Man in the World   محمد صلی اللہ علیہ وسلم: ایک ایسی شخصیت جنہیں دنیا میں سب سے زیادہ غلط سمجھا گیا
Aiman Reyaz, New Age Islam

ذاتی طور پر (محمد صلی اللہ علیہ وسلم) کے تعلق سے جو بات مجھے حد درجہ پسند  ہے وہ یہ ہے کہ  ابتدائی ایام سے ہی انتہائی دشوار کن زندگی گزارنے کے با وجود ، وہ ہمیشہ مسکراتے اور کہتے ‘تمام تعریفیں اللہ کے لئے ہیں ’۔  وہ  20 اپریل  570 سنہ عیسوی  کو مکہ میں پیدا  ہوئے  ۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی پیدائش سے پہلے ہی  آپ کے والد ماجد عبداللہ  کا انتقال ہو چکا  تھا ۔ اور جب آپ  صرف چھ سال کے تھے تو آپ  کی  والدہ آمنہ کا  بھی  انتقال ہو گیا ۔ آپ کے دادا ، عبدالمطلب نے آپ کی سرپرستی کی ۔ اور دو سالوں کے بعد آپ  کے دادا کا بھی انتقال ہو گیا ۔ تب اس وقت آپ کے چچا، ابو طالب نے آپ سر پرستی فرمائی ۔

 

The Truth behind Taliban's Fatwa Justifying Killings of Innocent Civilians Part-6  نوائے افغان جہاد کا فتویٰ اور اسکی حقیقت: (قسط۔ 6) ۔ اسلام جنگ میں زمین سوختہ پالیسی کا مخالف
اسلام کا یہ پیغام ہے کہ مسلمان کسی قوم کی دشمنی میں انصاف اور صحیح راہ کو چھوڑ کر ظلم اور زیادتی اختیار نہیں کرتا ۔بلکہ جنگ ہو یا امن ہر حالت میں عدل، اعتدال او رذمے داری کے ساتھ برتاؤ کرتا ہے ۔ اس لئے جنگ کے دوران غیر مسلم فوجوں نے زمین سوختہ پالیسی جو اختیار کی تھی اور جو آج  بھی مروج ہے اس پالیسی کواسلام نے منسوخ کیا اور اس کی مذمت کی کیونکہ اس پا لیسی سے عوام فاقہ، بے گھری اور بے شمار پریشانیوں میں مبتلا ہوجاتے ہیں ۔

 

Past Forgotten, Future Tense ماضی کو بھلا دیا گیا ، مستقبل کی پریشانی
Arshad Alam for New Age Islam
انصاف کے کسی تصور کے بغیر بھول جانے سے کوئی فائدہ نہیں ہوگا ۔ ٹیلی ویزن پر چل رہے حالیہ مباحثے مسلمانوں کو یہ تمام واقعات بھولنے  پر  ابھار رہے ہیں ، گجرات کا منظم قتل  عام صرف اس بات کی یاد دہانی کرانے والا ہے کہ ہم ایک معاشرے کی حیثیت سے کس طرح ان  تلیف  دہ حقائق کو بھولنے کے عادی  ہوتے ہیں

 

The Truth behind Taliban's Fatwa Justifying Killings of Innocent Civilians Part-7 نوائے افغان جہاد فتویٰ اور اسکی حقیقت ۔ (قسط ۔7)۔ اسلام غیر محارب افراد کے قتل کی اجازت نہیں دیتا
امریکہ یا کسی بھی دوسری قوم کا اگر اصول ہے کہ وہ افراد کے قصوروں کی سزا عوام کو دیتے ہیں تو جواب میں اسلام بھی اسی شیطانی اور غیر انسانی اصول کی تقلید کی اجازت نہیں دیتا ۔  بدلے اور انتقام کے لئے قرآن اور حدیث میں رہنما اصول پیش کردیئے گئے ہیں اور علماء اور فقہا اور خلفائے راشدین نے جنگ اور امن ہر حالت میں  معصوم افراد پر ظلم سے منع کیا ہے ۔

 

Refutation of Sheikh Yousuf Al-Abeeri's fatwa حملے اور بے گناہ شہریوں کے وحشیانہ قتل کی حمایت  میں ویب سائیٹ نوائے افغان جہاد پر شائع ہونے والے شیخ یوسف العبیری کے فتویٰ کی تردید ۔ حصہ 2
Mohammad Yunus, New Age Islam

فتویٰ پہلے حصے کی گفتگو پر مزید  کوئی دلیل نہیں پیش کرتا ہے ، جبکہ اوپر  مذکور  اس کا ہر ایک تازہ بیان اور  جز قطعی مسترد ہو  چکا ہے ۔سورۃ الاسراء کی ایک  آیت  جو اس میں مذکور ہے  ‘‘اور کوئی شخص کسی دوسرے کا بوجھ نہیں اٹھائے گا۔’’ (17:15) ، کسی بھی بے گناہ پر سزا کے اجراء  پر دی گئی دلیل کو کمزور تر کرتا ہے ، جبکہ وہ دونوں آیتیں جو  انسانوں کومصیبت کا مورد ہونے  کے خدائی منصوبہ کی دلیل میں  پیش کی گئی ہیں ، خدائی مثال پر انسانوں کے عمل کرنے میں اس کی بنیاد نا جائز ہے ۔

 

Refutation of Sheikh Yousuf Al-Abeeri's fatwa  9/11 حملے اور بے گناہ شہریوں کے وحشیانہ قتل کی حمایت میں ویب سائیٹ نوائے افغان جہاد پر شائع ہونے والے شیخ یوسف العبیری کے فتویٰ کی تردید ۔ حصہ ۔ 1
Mohammad Yunus, New Age Islam

فتویٰ اسلامی علماء اور ائمہ کے ذریعہ جاری کیا گیا ہے ، اس سے کو ئی فرق نہیں پڑتا کہ   وہ اس زمانے میں کتنے ممتاز ، صالح اور با عزت ہیں ،کیا وہ اس زمانے کے تاریخی حقائق اور چیلنجز سے با خبر ہیں ؛ آنے والے زمانوں میں ان کی ‘‘مذہبی قیادت’’ کا جواز صرف اس وقت تک بر قرار ہے گا جب تک قرآن کے پیغامات سے ان کی ہم آہنگی بر قرار رہے گی ۔

 

Judaism, Christianity And Islam: Are They One And The Same?    یہودیت،عیسائیت اور اسلام :کیا وہ ایک ہیں اور ہم مثل ہیں ؟
Aiman Reyaz, New Age Islam

یہودیت ، عیسائیت اور  اسلام یہ تمام عظیم مذاہب ہیں ۔یہ مختلف مراتب کے ساتھ ایک ہی طرح کے مذہب ہیں ۔ بنیادی طور پر ان کے درمیان ذرہ برابر بھی فرق نہیں ہے ۔سب سے اہم با ت ایک خدا پر یقین رکھنا اور ایک خداکی عبادت کرنا ہے ۔ جب موسیٰ علیہ السلام سے پہلے حکم الٰہی کے بارے میں پوچھا گیا تو آپ نے فرمایا ‘‘ ائے بنی اسرائیل  سنو! ہمارا خدا ایک خدا ہے ’’۔  جب عیسیٰ علیہ السلام سے یہی پوچھا گیا تو آپ نے بھی یہی جواب دیا ‘‘ ائے بنی اسرائیل  سنو! ہمارا خدا ایک خدا ہے ’’۔  انہوں نے (عبرانی زبان میں ) لفظ بہ لفظ انہیں جملوں کو دہرایا جو موسیٰ علیہ السلام نے کہا تھا ۔ جب ہم محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی بارگاہ میں آتے ہیں تو یہاں بھی یہی پاتے ہیں۔  جب عیسائیوں نے پوچھا کہ ‘‘ خدا  کے بارے میں آپ کا کیا تصور ہے ؟’’ تو آپ نے فرمایا :‘‘ خدا صرف ایک ہے ’’۔

 

The Truth behind Taliban's Fatwa Justifying Killings of Innocent Civilians Part-5   نوائے افغان جہاد کا فتویٰ اور اس کی حقیقت: (قسط۔۵) ۔  قرآن ،  حدیث اور فقہ کا غلط انطباق
Sohail Arshad, New Age Islam

نوائے افغان جہاد میں اپنے مضمون ‘‘ وہ حالتیں کہ جن میں کفار کے عام لوگوں کا قتل بھی جائز ہے’’ میں یوسف العبیری مثلہ کا مسئلہ اٹھاتے ہوئے یہ فتویٰ دیتے ہیں کہ اگر کفار مسلمانوں کے عورتوں او ربچوں کا قتل کرتے ہیں تو مسلمانوں کے لئے بھی یہ جائز ہوجاتا ہے کہ وہ بھی کفار کے عام لوگوں او ر عورتوں او ربچوں کا قتل کریں ۔ اپنے اس فتوے کی حمایت میں قرآن کی وہی آیت پیش کرتے ہیں جس میں بدلہ لینے کی اجازت دی گئی ہے ۔ اس سلسلے میں ابن تیمیہ رحمۃ اللہ علیہ کے اس اقتباس کا حوالہ دیا گیا ہے ۔

 

Islam: Identity or Faith?   اسلام کیا ہے :شناخت یا مذہب
Saif Shahin, New Age Islam

چاروں طرف نظر دوڑانے پر دنیا ایسے محمد ابراہیم سے بھری نظر آئے گی جن کا  اصلی نام محمد ابراہیم نہیں ہے ، انہوں نے اسلام  کو ایک دین کی حیثیت سے قبول نہیں کیا ہے ،بلکہ صرف پہچان   بنانے کے لئے  اسلام قبول کیا ہے ۔کیا انہوں نے مذہب میں دلچسپی لیتے ہوئے  اسلام کو اس کی تعلیمات کے ساتھ سمجھنے کی کوشش کی ، یہ ان کے لیئے مثبت اور مظہر کامل ہوتا۔  یہ تعلیم اور  غور و فکر کے ذریعہ  خود ان کی اصلاح میں مددگار ثابت ہوتا ، ان کے اندر لبرل اقدار پیدا کرتا ،اور ان کے اندر ان کے ہم عصر  معاشروں میں ضم ہونے اور غیر مسلموں کے ساتھ پرامن بقائے باہم  کی اجازت دیتا ، جیسا کہ اسلام  حکم دیتا  ہے  ۔

 

Jesus Christ in the Quran   قرآن میں عیسیٰ مسیح کا تذکرہ
Aiman Reyaz, New Age Islam

قرآن میں عیسیٰ مسیح (علیہ السلام )کا نام پچیس مرتبہ مذکور ہے جبکہ محمد صلی اللہ علیہ وسلم کا نام (احمد ) صرف پانچ مرتبہ ہی مذکور ہے ۔ ان کا نام قرآن میں اس طرح لیا گیا ہے : ‘مریم کے بیٹے ’ ، ‘مسیحا ’ ،  ‘اللہ کے پیغمبر ’ ، ‘اللہ کی نشانی’، ‘اللہ کی روح’۔ یہ تمام محترم اور معزز نام اس عظیم پیغمبر کے لیئے وضع کئے گئے ہیں ۔ اگر کسی راسخ الاعتقاد عیسائی کو بھی اس کی  منطقی تشریح کرنے کو کہا جائے تو قرآن میں ایک بھی ایسا بیان نہیں ہے کہ وہ  اس پر وہ اعتراض  کرے ۔

 
1 2 ..35 36 37 38 39 40 41 42 43 44 ... 70 71 72


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on forced conversions to Islam in PakistanPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

NEW COMMENTS