certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

Forced Religious Conversions  جبراً تبدیلی مذہب کے واقعات: بابری مسجد ایکشن کمیٹی کی اشتعال انگیزی غلط اور مہلک

بہت سے مسلمانوں کو اس بات کا خوف ہے کہ  BMAC صدر کے اس جارحانہ اور آئین مخالف بیانات سے ہندوتوا طاقتوں کو سیکولر ذہن رکھنے والے ہندوؤں کی حمایت کا فائدہ حاصل ہوگا اور اس سے صرف ان دو گروہوں کے درمیان تقسیم اور تفرقہ میں اضافہ ہوگا۔یہ بات بھی باعث تشویش ہے کہ BMAC کے شریکِ بانی، جناب ظفریاب جیلانی نے ان بیانات کی مذمت نہیں کی ہے۔ اس معاملے میں ان کی خاموشی اس عالم کے موقف کے لیے ان کی حمایت کے مترادف ہوگی۔

 

In A Belated But Welcome Step, India Bans Islamic State  حکومت ہند نے آئی ایس پر پابندی عائد کر دی، تاخیر سے ہی سہی لیکن یہ ایک خوش آئند اقدام ہے

مئی میں کلیان، مہاراشٹر سے چار نوجوانوں نے عراق جا کر آئی ایس میں شمولیت اختیار کی تھی۔ کچھ دن پہلے جب وہ ہندوستان واپس ہوئے تو انہوں نے یہ اعتراف کیا کہ انہوں نے آئی ایس میں شمولیت اختیار کی تھی اور 15 دنوں تک عراق میں انہیں تربیت دی گئی اور پھر شام اور عراق میں انہیں لڑنے کے لئے بھیجا گیا تھا۔ وہ جنگ میں زخمی ہو گئے تھے اور اپنی زندگی بچانے کے لیے وہاں سے فرار ہو کر ترکی بھاگ گئے جہاں سے وہ پھر گھر واپس ہوئے۔ عراق بھاگنے سے پہلے، انہوں نے اپنے والدین اور بہن کے پاس ایک نوٹ چھوڑا تھا جس سے ہمیں ان کے خیالات اور نظریات کااندازہ ہوا:

 

Is This Islam? کیا یہ اسلام ہے؟  پیشاور کی ایک بلکتی ماں کا سوال۔ نہیں، یہ اسلام نہیں ہے: ہندوستانی علماء کا جواب۔ لیکن مولانا اصلاحی کے بےرحمانہ تشدد کے دفاع کو کیا کہیں؟ کیا انہیں خارج از اسلام کہا جائے؟
Sultan Shahin, Editor, New Age Islam

کل پشاور میں ایک خاتون نے دریافت کیا: کیا یہ اسلام ہے؟ وہ خون سے لت پت اپنے اسکول جانے والے بچوں کی لاشوں کے اوپر رو رہی تھی. 132 معصوم بچوں سمیت متعدد خواتین اساتذہ کے فخرمند قاتلوں کا تعلق پاکستان کے طالبان سے ہے. یہ طالبانی افراد دینی مدارس کے طالب علم ہیں جو اسلام کی تعلیمات سے اچھی طرح واقف ہیں. اس کے باوجود انہوں نے فخر کے ساتھ اسلام کے نام پر معصوم جانوں کا قتل کردیا؛ اسلام کی سربلندی اور دنیا پر خدا کی حاکمیت کو قائم کرنے کے اپنے زعم باطل میں۔ لہذا فطری طور پر یہ سوال اٹھنا تھا کہ کیا واقعی یہ اسلام ہے؟ تاہم ہندوستانی مسلم علماء نے اس سوال کا جواب دینے کا عزم کیا۔ لہذا انگریزی روزنامہ ‘‘انڈین ایکسپریس’’ میں ایک رپورٹ کے مطابق، مسلم علماء نے پشاور حملہ کو اسلام کے بنیادی اصولوں کے خلاف قرار دیا. انہوں نے بیان دیا کہ اس طرح کے تشدد کا ارتکاب کرنے والوں کا مذہب سے کوئی تعلق نہیں ہے اور بچوں کے قتل کا قطعا کوئی جواز نہیں ہے………

 

ہا ہا ہا۔۔۔ اپنے آقاؤں کی خوشنودی یا اپنی کھال اور چہرے بچانے کے لیے تمھارا یہ کہتے رہنا ہماری سمجھ میں خوب آتا ہے کہ جس نے بھی یہ کام کیا ہے، ہم اس کی پرزور مذمت کرتے ہیں۔ اسلام کسی بھی صورت میں کسی کے بھی بچوں کو مارنے کی اجازت نہیں دیتا۔ کوئی بھی مسلمان ایسا ظلم کرنے کے بارے میں سوچ بھی نہیں سکتا۔ ہم یہ بہیمانہ دہشت گردی قبول نہیں کرسکتے۔ مگر ہم کسی کا نام نہ لیں گے۔ جس نے بھی یہ گھٹیا حرکت کی ہے اس نے اچھا نہیں کیا مگر ہم کسی کا نام نہیں لیں گے کیونکہ جب تک ٹھوس ثبوت نہیں مل جاتے کہ یہ کام دراصل کس گروہ نے کیا ہم کسی کا نام نہیں لیں گے۔

 

میٹرک کرنے والے یا مڈل سکول میں پڑھنے والے یا پرائمری جماعت کے طالب علم نے آخر کیا گناہ کیا ہوگا کہ اس کی کی بخشش کے لیے دعا مانگی جائے۔ ہو سکتا ہے کسی نے کینٹین والے کا بیس روپے ادھار دینا ہو، ہو سکتا ہے کسی نے اپنے کلاس فیلو کو امتحان میں چپکے سے نقل کرائی ہو۔ کسی نے ہو سکتا ہے کرکٹ کے میچ میں امپائر بن کر اپنے دوست کو آؤٹ نہ دیا ہو، کوئی کسی سے ایزی لوڈ لے کر مکر گیا ہو۔ ہو سکتا ہے کسی نے کلاس میں کھڑے ہوکر استاد کی نقل اتاری ہو، ہو سکتا ہے کسی شریر بچے نے سکول کے باتھ روم میں گھس کر اپنا پہلا سگریٹ پیا ہو۔

 

Conspiracy of Driven People away from Islam  لوگوں کو اسلام سے بدظن کرنے کی سازش
Shakeel Shamsi

آسٹریلیا کے شہر سڈنی میں کل رات ایک مسلح شخص نے ایک ریسٹورینٹ میں گھس کر کئی لوگوں کو یرغمال  بنا لیا اور خود کو بم سےاڑادینے کی دھمکی دی۔ اس واقعہ کا سب سے افسوسناک پہلو یہ تھا کہ اس شخص نے بار بار کھڑکی سے ایک سیاہ کپڑا لہرایا جس پر سفید رنگ سے کلمۂ طیب تحریر تھا ۔ اس چھوٹے سےبینر کو دیکھ کر میرے دل کو بہت تکلیف ہورہی تھی ۔ میں سوچ رہا تھا کہ ایک زمانہ ایسا تھا کہ اللہ کی وحدانیت اور حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی رسالت کی گواہی دینے والے یہی متبرک الفاظ اگر کہیں لکھے ہوئے نظر آتے تھے تو مصیبتوں میں گھر ے ہوئے لوگوں کو آنکھوں میں یقین  او ر اطمینان کے  ہزاروں دیپک جل اٹھتے تھے ۔

 

Pakistan: dipped in the blood of children  بچوں کے خون میں ڈوبا پاکستان
Shakeel Shamsi

اف میرے خدا ! کیا  یہ بھی ممکن ہے ؟ کیا ایسے بھی ہوسکتےہیں مسلمان؟ کیا ایسے بھی ظالم آج دنیا میں موجود  ہیں جو ننھے ننھے بچوں کو قتل کرنے کےبعد بڑے فخر سےاس کی ذمہ داری بھی قبول کرنے کو تیار ہیں؟ کیا ایسابھی ممکن ہے کہ اللہ کی کبریائی اور اللہ کی عظمت کےاظہار کے لئے بار بار ادا کیا جانے والا نعرۂ تکبیر لگا کر کوئی بچوں کے درمیان خود کش دھماکہ کرسکتاہے؟ کیا ایسے لوگوں کو بھی خود کو مسلمان کہنے کا حق ہے جو بے قصوروں کو قتل کر کےاپنے ناپاک مقاصد کو پورا کرناچاہتے ہیں؟ پیر کی صبح ہوئی تو سڈنی کے ایک کیفے میں ایک درندہ کچھ بے قصور شہریوں کو یرغمال بناکر اللہ اور رسول کے نام کا پرچم لہرا کر ان کی تعلیمات کا مذاق اڑا رہا تھا ۔ منگل کی صبح کو ٹی وی کھولا تو دیکھا کہ پاکستان میں افراتفری مچی ہوئی ہے۔

 

چند دنوں پہلے  کلیان ( ممبئی) کے رہنے والے نوجوان اریب مجید کا بڑا چرچا تھا جو اپنے دوسرے تین ساتھیوں کےساتھ بغداد پہنچ گیا تھا اور داعش (اسلامی ریاست برائے شام و عراق) کے شانہ بشانہ اسلامی جنگ میں شریک ہونا چاہتا تھا ۔ بہر حال عراق میں اس کے ساتھ جو سلوک کیا گیا اس سے دلبراشتہ ہوکر وہ ترکی چلا گیا او ر وہاں سے اپنے والدین کو فون کیا کہ وہ واپس ہندوستان آنا چاہتا ہے ۔ والد کے کہنے پر وزارت داخلہ نے اس کی واپسی کا انتظام کیا ۔ اس وقت مجید پولس کی تحویل میں ہے اور اس سے اسکے سفر عراق  اور ‘‘ تجربات و حوارث’’ کی بابت پوچھ گچھ  کی جارہی ہے۔اس دوران مجید نے انٹلی جنس ایجنسیوں کو جو اطلاعات بہم پہنچائی  ہیں ان سے ظاہر ہے کہ ٹوئیٹر پر وہ داعش کی سرگرمیوں کو دیکھ کر بے حد متاثر ہوا تھا اور اس کاحصہ  بننے کی غرض سے وہ عازم عراق ہوا تھا ۔

 

Shia-Sunni Clashes in Lucknow and Bhopal  لکھنؤ اور بھوپال میں شیعہ سنی جھڑپیں-کیا یہ عراق اور شام میں آئی ایس کی  جنگوں کا نتیجہ ہے؟

تاہم، حالات میں تبدیلی اس وقت شروع ہوئی جب مکہ کے امام حرم ڈاکٹر شیخ سدیس نے مولانا ارشد مدنی کی ذاتی دعوت پر 'عظمت صحابہ' کانفرنس میں شرکت کرنے کے لیے ہندوستان کا اچانک دورہ کیا جسے 26 مارچ 2011 کو نئی دہلی میں جمعیت علمائے ہند نے منعقد کیا تھا، (متعلقہ مضامین ملاحظہ کریں)۔ ایسا لگتا ہے کہ شیخ سدیس یا سعودی عرب نے عملی طور پر ملک کی موجودہ شیعہ سنی ہم آہنگی میں خلل پیدا کرنے کے لیے مولانا مدنی کے ساتھ معاہدہ کیا ہے۔ پورے ملک میں اور خاص طور پر لکھنؤ جیسے شیعہ اکثریتی علاقوں میں عظیم الشان "عظمت صحابہ کانفرنس" منعقد کرنا۔ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے صحابہ جنہیں شیعہ حقارت کی نظر سے دیکھتے ہیں، کی عظمت بیان کرنے کی کوئی مذہبی اہمیت نہیں ہے۔ ان تمام باتوں کا صرف ایک ہی مقصد ہے اور وہ ہے شیعوں بھڑکانا اور جھڑپوں کو بڑھاوا دینا۔ اسی طرح پاکستان میں سنی وہابی فرقہ ورانہ دہشت گرد تنظیم سپاہ صحابہ قائم کی گئی تھی جس کے نتیجے میں ہزاروں شیعوں کا قتل ہوا۔

 

ابن رشد : جغرافیہ دان، فلسفی، ریاضی دان، ماہر علم فلکیات اور ماہر فن طب ابن رشد قرطبہ میں 1126ء میں پیدا ہوئے ۔ ان کا پورا نام ابو الولید محمد بن احمد بن محمد بن احمد بن رشد القرطبی الاندلسی ہے۔ ابن طفیل  اور ابن اظہر جیسے مشہور عالموں سے دینیات ، فلسفہ  ، قانون ، علم الحساب اور علم فلکیات کی تعلیم حاصل کی۔ یوں تو ابن رشد نے قانون ، منطق ، قواعد زبان عربی ، علم فلکیات ، جغرافیہ اور طب پر متعدد کتب لکھی ہیں ۔  مگر ان کی وہ تصانیف زیادہ مقبول ہوئی ہیں جو ارسطو کی ما بعد الطبیعات کی وضاحت اور تشریح کے سلسلے میں ہیں ۔ ابن رشد 1198 عیسوی کو مراکش میں انتقال کر گئے ۔ جماالدین  العلوی نے ابن رشد کی 108 تصانیف شمار کی ہیں جن میں سے ہم تک عربی متن میں 58 تصانیف پہنچی  ہیں، ابن رشد کی اس قدر تصانیف میں خاص بات یہ  ہے کہ انہوں نے ارسطو کے سارے ورثے کی شرح لکھی ۔

یقیناً چھوٹی سے اس عمر میں بھی میں نے موت کے بارے میں سنا تھا لیکن میں نے یہ سوچھا تھا کہ موت دوسروں کو آ سکتی ہے، مجھے کبھی نہیں۔ گھر میں اور اسکول میں کسی نے موت کے بارے میں بات نہیں کی اور نہ ہی موت کے بارے میں سوچنے کی خواہش کی۔ لیکن اب خود میری موت سمیت، موت ایسی چیز ہے کہ مجھے اسے تسلیم کرنے سے بچنے کی ضرورت محسوس نہیں ہوتی۔ میں اگرچہ میں موت کے بارے میں ذہنی ہیجان کا شکار نہیں ہوں۔ اور نہ ہی میں اس بات کی امید کرتا ہوں کہ فوراً مجھے موت آ جائے گی یا یہ دنیا آج ہی فنا ہو جائے گی، لہٰذا مجھے نہیں لگتا کہ میں کسی مایوسی کا شکار ہوں یا مجھے فوری طور پر طبی علاج یا مشورے کی ضرورت ہے۔ ایسا نہیں ہے کہ میں نے زندگی کی امید چھڑ دی ہے، زندگی سے ساری دلچسپی ختم ہو گئی ہے اور اب میں اسے ختم کرنا چاہتا ہوں اسی لیے موت کے بارے میں سوچ رہا ہوں۔

 

Misuse of Mosques for Politics  سیاست کے لئے مساجد کا غلط استعمال: شاہی امام کا خطبہ جمعہ میں لَو جہاد پر زور
Shahi Imam Ahmad Bukhari of Jama Masjid, Delhi

گزشتہ انتخابات کے بعد سے جس سے بی جے پی اقتدار میں آئی ہے بی جے پی اور آر ایس ایس سے وابستہ دیگر تنظیموں کے تمام مختلف فرقہ وارانہ بیانات کا ذکر کرتے ہوئے شاہی امام نے کہاکہ ان لوگوں کو مرکزی حکومت میں کابینہ کے عہدے سے نوازا گیا ہے۔ اس تناظر میں ایک آئندہ شاہی امام کی حیثیت سے اپنے بیٹے کی رسم دستار میں وزیر اعلی نریندر مودی کو مدعو نہ کرنے کے لیے انہوں نے خود اپنی پیٹھ تھپتھپائی۔ مسجد جیسی مقدس جگہ پر جسے لوگ اپنی روحانی پناہ گاہ تصور کرتے ہیں، انہو نے انتہائی گندی زبان کا استعمال کرتے ہوئے کہا کہ جن لوگوں نے ٹیلی ویژن چینلز یادیگر مقام پر مودی کو مدعو نہ کرنے کے لیے مجھے تنقید کا نشانہ بنایا وہ یا تو خود طوائف ہیں یا اس پیشہ میں اپنی بیویوں کا استعمال کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ: "انہیں یہ معلوم نہیں ہے کہ ان کی عورتیں یا ان کی بیویاں اپنی  راتیں کہاں گزارتی ہیں!"

Muslims Of Okhla In Delhi Acted With Restraint  شدید دل آزاری کے با وجود  اوکھلا کے مسلمانوں کا  صبر و تحمل: اسلام کی پر امن تعلیمات  ، حکمت و تدبر اور اخوت و محبت کی شمع جلانےکی بہترین مثال
Ghulam Ghaus, New Age Islam

اس کے علاوہ، ایسی متعدد روایتیں ملتی ہیں جن سے ہمیں یہ پتہ چلتا ہےکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے کس طرح مذہب کے اختلافات، ذات پات اور رنگ و نسل وغیرہ سے قطع نظر امن کے تصور کو فروغ دیا ہے۔ اس میں ایک پیغام یہ بھی پنہاں ہے کہ اگر ہم امن کی خواہش رکھتے ہیں تو ہمیں دوسروں کی متعدد ناخوشگوار چیزوں کو بھی برداشت کرنا ضروری ہے۔ بلاشبہ معاشرے میں امن قائم کرنے کے لیے اس کے علاوہ اور کوئی دوسرا راستہ نہیں ہے۔ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی اس کمال رحمت میں ہم پوری انسانیت، خاندان، بچوں، یتیموں، بیواؤں، بیماروں اور جانوروں تک کو شامل کر سکتے ہیں۔

تعلیم کی ضرورت ہر معاشرے اور سماج کو ہے تعلیم کاحصول تہذیب و ثقافت کی روشنی پر گامزن کراتا ہے بے راہ روی ،جہالت نادانی کےغا ر سے نکالتا ہے۔ جو معاشرے تعلیم کو اوڑھنا بچھونا بناتا ہے وہ یقیناً غربت و افلاس تشدد بربریت سماجی نا ہموار لسانی  قومی تفاخر اور عصبیت و انانیت جیسی برائیوں سے پاکیزہ ہوتا ہے۔ اس لئے ضرورت ہے کہ ہم زیادہ سے زیادہ تعلیم  کے فروغ اور اس کے حصول پر توجہ دیں ۔ دینی علوم کے ساتھ  ساتھ عصری علوم کو بھی حاصل کرناہماری تہذیب کا حصہ رہاہے۔ اگر ہم تاریخ پر نگاہ ڈالیں تو اندازہ ہوتاہے کہ مسلم قوم میں قد آور اساطین علم پیدا ہوئے جنہوں نے اپنے علم کی روشنی سے مغرب و مشرق دونوں کو سیراب کیا ہے  اور انہوں نے سائنسی ایجادات عصری  علوم پر اپنے گہرے تقوش  چھوڑے ہیں۔

 

Nobel Peace Prize and Malala's Speech  نوبل امن انعام اور ملالہ کی تقریر
Dr. Syed Mobin Zahra

ملالہ یوسف زئی نے اپنی تقریر میں والدین کا شکر یہ ادا کرتے ہوئے اپنی والدہ سے پہلے  اپنے والد کا شکر یہ ادا کیا۔ ملالہ نے کہا کہ میں نے والد کی شکر گزار ہوں کہ انہوں نے میرے پر نہیں کُترے او رمجھے پرواز کرنے  دی۔ پاکستان جیسی اس سماج میں جہاں  جہاں طالبانی قہر بن کر کتابوں کا بستہ لے جارہی بچیوں پر گولیوں کی بوچھار کردیتے ہوں واقعی ملالہ یوسف زئی کے والد کا یہ عمل قابل دادکہا جائے گا۔ ملالہ نے اپنی والدہ  کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا  کہ انہوں نے مجھے صبر کرنا اور ہمیشہ سچ بولنا سکھایا جو میں سمجھتی ہوں کہ اسلام کا حقیقی پیغام ہے۔

 

Call For International Fatwas  اسلام کے نام پر معصوم لوگوں کا بے دریغ قتل کرنے والے دہشت گردوں کو خوارج کی طرح 'مرتد دہشت گرد' قرار دیا جائے
Muhammad Yunus, New Age Islam

القاعدہ اور طالبان جیسے اہم دہشت گرد تنظیموں کے علماء نے فتاوے جارے کیے ہیں جن میں انہوں نے 9/11جیسے حملوں میں معصوم شہریوں کے قتل کا جواز پیش کیا ہے۔ لیکن جیسا کہ سلسلہ وار تردید مضامین کے خلاصہ میں میں نے کھا ہے  کہ:"فتویٰ کا آخری دعویٰ کہ یہ قرآن و حدیث سے تصدیق شدہ ہے محض ایک جھوٹ ہے کیونکہ اس کا کا ہر حصہ قرآن کی روشنی میں رد کردیا گیا ہے  اور فتوے کا یہ اختتامی حصہ اور مجموعی آٹھوں حصے بھی قرآن  یا صحیح حدیث ( جیسے بخاری مسلم) سے  اپنے موضوع کو ثابت کرنے کے لئے ایک بھی حوالہ دینے  سےقاصر ہیں  ۔ کوئی بھی حدیث  اسے صحیح قرار نہیں دے گی کیونکہ قرآن فتوے کے ہر حصے کو  اور مجموعی آٹھوں حصوں کو ردّ کرتا ہے"۔

 

دلیپ کمار کو ہم کس کسوٹی پرپرکھیں گے۔ آپ کوئی بھی آلہ پیمائش لے لیں ۔ ڈائیلاگ  ڈلیوری ، انداز بیاں، افسردگی کا ماحول ، قہقہو ں کا  سماں، محبت کا اظہار ، ظلم کے خلاف تن کر کھڑا ہونا یا پھر ٹوٹتے بنتے سماجی اقدار میں ایک عام آدمی کی الجھنوں کی نقاشی ، دلیپ کی اداکاری ان سب سے دو قدم آگے نکلتی  نظر آتی۔ ان کو ان کے ہم عصروں کے ساتھ جوڑ کر دیکھئے تو فلم انڈسٹری کی تثلیث  راجکپور، دیو آنند اور خود دلیپ کمار میں سے جو سب سے ورسٹائل  آرٹسٹ آپ کو ملے گا تو وہ دلیپ ہی ہوگا۔ راج کپور نے اپنےآپ کو سماجی خدمت گار جیسے عام آدمی کے قلب میں ڈھال لیا۔

 

The Meaning of Establishing Salat  اقامت صلوٰۃ

رسول اکرم سے منسو ب ایک حدیث  جس کا ہر اجتماع میں ذکر کیا جاتا  اور جس کو پابند ی سے ٹی وی پر دکھایا جاتا ہے کہ ‘‘ صلوٰۃ جنت کی گنجی ہے’’ یہاں صلوٰۃ کا ترجمہ نماز کیا جاتاہے۔ اس کا مفہوم و معانی درحقیقت معاشرہ ہے اور یہ بالکل درست ہے  کہ قیام معاشرہ ( یعنی  ایسا معاشرہ جیسا کہ اللہ چاہتا ہے) ہی ایسی گنجی ہے جس سے دنیا میں مومن کی زندگی بحیثیت مجموعی جنتی بن جاتی ہے۔ اقوام عالم کے عروج زوال کے کوائف و حالات کا اللہ تعالیٰ نے قرآن میں مختلف مقامات پر ذکر فرمایا ہے جس قوم نے اچھے اخلاق و کردار کو اپنایا اور ان پر عمل پیرا رہی ، اس کی دنیا وی زندگی جنت ہی رہی اور جب اس کے اخلاق و کردار و عادات و اطوار  زوال پذیر ہوگئے تو وہ قوم قعر مزلت میں جا گری ۔ جو قوم اپنے معاشرے کو اللہ کے بتائے ہوئے اقدار ، اصول ، ضوابط اور قوانین پر قائم کرے گی او رانہی پر کار بند رہے گی ، وہ دنیاکے اعلیٰ مقام و منصب پر فائز رہے گی اور اس قوم کی کیفیت ‘‘فَلَا خَوْفٌ عَلَيْهِمْ وَلَا هُمْ يَحْزَنُونَ ’’ ( 2:38)  کی طرح رہے گی۔

 

Compilation and Formulation of the Qur'an  مَعَھُمُ الْکِتٰبَ با لْحَق

قرآن حکیم ہمیں مدین  میں بسنے والی شعیب علیہ السلام کی قوم کے بارے میں بتاتے ہوئے  کہتا ہے کہ قوم شعیب کو بڑا کاروباری فروغ حاصل تھا لیکن ان  کا یہ فروغ ان کے نظام سرمایہ  داری کا رہین  منت تھا، اُن کی اِنتہائی کوشش یہ ہوتی تھی کہ ‘‘ دوسروں سے لیا زیادہ جائے اور دیا کم جائے’’ حضرت شعیب علیہ السلام انہیں الکتاب کی حکمت سے آگاہ کرتے اور اِن سے کہتے ‘‘ تم اپنے ناپ تول کے پیمانے صحیح رکھو ، دھوکا اور فریب سے لوگوں کی چیزیں  نہ ہتھیا لیا کرو’’، اِس سے معاشرے میں سخت نا ہمواریاں پیدا ہوجاتی ہیں جن کا نتیجہ تباہی اور بربادی کے سوا کچھ نہیں ۔ دولت کے نشے میں بدمست  اُن کی قوم کا سرمایہ دار طبقہ ان کا مذاق اڑاتا اور حضرت شعیب علیہ السلام سے کہتا کہ ‘ تم اللہ پرست  انسان ہو تو اپنے صوم و الصلوٰۃ سے کام رکھو’ تمہیں اِن دنیاوی دھندوں  سےکیا واسطہ؟ یہ ہمارا کاروبار ہے ، اسے ہم جس طرح چاہیں سر انجام دیں ۔ غریبوں اور ناداروں  کا سارا ‘‘ درد’’ تمہارے  ہی جگر میں  کیوں ہے؟  ہم جانتے  ہیں کہ یہ غریب اور کمزور لوگ کس سلوک کے مستحق  ہیں او رانہیں کتنا دینا چاہیے۔

 

Radical Clerics Misusing Islamic Literature, Particularly Hadith Traditions  انتہا پسند ملاؤں کے مذموم مقاصد اور کتب احادیث کا غلط استعمال
Ghulam Rasool Dehlvi, New Age Islam

حال ہی میں ایسی ہی ایک شر انگیز مثال ایک پاکستانی فوجی آفیسر اور ایک طالبانی مولوی کے درمیان ایک پر جوش نظریاتی بحث (یا مناظرہ) میں دیکھنے کو ملی۔ طالبانی مولوی نے دیوبندی مکتب فکرکے دو اہم اکابر ہندوستان کے مولانا حسین احمد مدنی اور پاکستان کے مفتی نظام الدین شامزی کے فتووں کا حوالہ دے کر اعتدال پسند شیعہ و سنی مسلمانوں اور پاکستانی فوجیوں کے بے دریغ قتل کو جائز قرار دیا۔ انہوں نے سیاق و سباق سے بالکل ہٹ کر بغیر کسی مفہومی مطابقت کے قرآن و حدیث کا بھی غلط حوالہ پیش کیا۔ جب پاکستانی اہلکار نے اس سے یہ سوال کیاکہ تم پاکستان کے اعتدال پسند مسلمانوں کو قتل کرنے کے درپے  کیوں ہو؟ تو اس نے یہ جواب دیا کہ:  "جو شخص بھی مذہبی امور میں ہم سے اتفاق نہیں رکھتا اسے قتل کرنا ہمارا فریضہ ہے"۔

قرآن کی حکمت اپنی تمام جہات میں قطعی اور فیصلہ کن ہے۔ یہ نہ ہی جسم کی مذمت کرتا ہے اور نہ ہی اسے تشدد کا شکار بناتا ہے، اور نہ ہی یہ روح کو نظرانداز کرتا ہے۔ یہ خدا کو "انسانی صفات سے متصف" نہیں کرتا، اور نہ ہی انسان کو خدا کا درجہ عطا کرتا ہے۔ خدا کے تخلیقی منصوبے کے تحت پورے احتیاط کے ساتھ تمام چیزوں کو وہیں  رکھا گیا ہے جو اس کا مناسب مقام ہے۔ اعمال اور انعامات کے درمیان اور ذرائع اور ضروریات کے درمیان ایک متناسب تعلق ہے۔ قرآنی حکمت غیر جانبدار نہیں ہے۔ قدرداں اور عقلمند اس کے مطالبات کا پوری خوشی کے ساتھ خیر مقدم کرتے ہیں۔

 

Refutation of Raymond Ibrahim’s Article  (ریمنڈ ابراہیم کے فتنہ پرور اور اسلام مخالف مضمون  ‘دولت اسلامیہ سر قلم اور مثلہ کرتا ہے کیونکہ قرآن ہدایت کرتا ہے’  کا رد قرآن کریم کی روشنی میں- ( حصہ 3
Ghulam Ghaus, New Age Islam

مسلمانوں، غیر مسلموں، سفارت کاروں، سفیروں، صحافیوں، امدادی کارکنوں اور مذہبی رہنماؤں سمیت معصوم جانوں کا قتل کرنا اسلام میں حرام ہے۔ کوئی بھی حکم شرعی جاری کرتے وقت عصر حاضر کے حقائق اور تقاضوں کو نظر انداز کرنا  ناجائز ہے۔ اسلام میں جہاد محض ایک دفاعی جنگ ہے۔ اسلام میں کسی کو بھی کفر کے ساتھ متصف کرنے کی اجازت نہیں ہے جب تک کہ کوئی مسلمان کھل کر اپنے کفر کا اعلان نہ کر دے۔ لوگوں کو اسلام قبول کرنے پر مجبور کرنا،عورتوں اور بچوں کو ان کے حقوق سے محروم کرنا، لوگوں پر ظلم و تشدد کرنا، لاشوں کا مثلہ کرنا، دہشت گردی اور برے کاموں کو اللہ عز و جل سے منسوب کرنا کسی بھی نبی یا صحابہ کی قبر کو ڈھانا اسلام میں سخت ممنوع ہے۔

 

Prophet Muhammad (saw)'s governance was Based on the Revelations  حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا برپا کردہ نظام وحی الہٰی پر مبنی تھا

اگر قرآن کریم وحی الہٰی نہ ہوتا اور حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے نعوذ باللہ نبی   ہونے کا جھوٹا دعویٰ عمداً کیا ہوتا، تاکہ انہیں شہرت و عزت ملے اور تمام معاشرہ میں ان کی بلند حیثیت ہوجائے ۔جیسا کہ جب حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے نبوت کا دعویٰ کیا تو کفار مکہ یہی  سمجھتے تھے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے  لئے اعلیٰ مقام حاصل کرنے کے لئے یہ دعویٰ کیا ہے تو انہوں نے حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے چچا ابو طالب کی معرفت حضور صلی اللہ علیہ وسلم کو اعلیٰ ترین درجات کی پیشکش کی لیکن حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ اگر آفتاب و ماہتاب بھی مجھے دے دیئے جائیں، تو میں اس دعویٰ سے دستکش نہیں ہوسکتا ۔ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کو اس بات کی ضرورت ہی نہیں تھی کہ وہ اسلام کو بحیثیت ایک دین کے پیش کرتے ۔ محفوظ اور اعتراضات  سےبچنے کا طریقہ یہ تھا کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم بھی اسلام کو بحیثیت ایک مذہب کے پیش فرماتے ۔

 

Refutation of Raymond Ibrahim’s Article  (ریمنڈ ابراہیم کے فتنہ پرور اور اسلام مخالف مضمون ‘دولت اسلامیہ سر قلم اور مثلہ کرتا ہے کیونکہ قرآن ہدایت کرتا ہے’ کا رد قرآن کریم کی روشنی میں- ( حصہ 2
Ghulam Ghaus, New Age Islam

اپنے مضمون  بعنوان ‘دولت اسلامیہ سر قلم اور مثلہ کرتا ہے کیونکہ قرآن ہدایت کرتا ہے’  کی بے بنیاد باتوں کو ثابت کرنے کے لئے عناد و تعصب کا نگاہ لئے  ریمنڈ ابراہیم نے ایک کافر عرب سردار ابو جہل کے قتل کا  واقعہ ذکر کیا ہے جس کے ذریعہ وہ اسلام کو  ظالم اور ابو جہل کو مظلوم ثابت کرنا چاہتے ہیں لیکن  جناب ریمنڈ نے اس پہلو کو نظر انداز کر دیا  کہ ابوجہل ابتدائے اسلام میں باقاعدگی کے ساتھ وحشیانہ انداز میں ہر ممکن طریقے سے عورتوں، بزرگوں، یتیموں اور مسلم نوجوانوں کو اپنے ظلم و تشدد کا نشانہ بنایا کرتا تھا۔ اس وقت کے دہشت گردوں کے سربراہ کے لیے ہمدردی ظاہر کرنے سے پہلے جناب ریمنڈ کو ابتدائے اسلام سے ہی ابوجہل کے پر تشدد اقدامات پر غور کر لینا چاہیے تھا۔

 

Eleven Days in the Spiritual City of Istanbul-Part -16  (روحانیوں کے عالمی پایۂ تخت استنبول میں گیارہ دن ( حصہ ۔ 16

پروگرام چونکہ میرے بیٹھتے ہی شروع ہوگیا تھا اور اس کے بعد کبھی موسیقی  کی ترنگ او رکبھی یا نُور کے نعروں نے پوری طرح  مشغول کرلیا تھا اس لیے ابتداً ماحول کابھر پور جائزہ  نہ لے سکا تھا ۔ اب جو یہ سلسلہ تھما تو میں نے اپنے قرب و جوار کا جائزۃ لینے کی کوشش کی ۔ اب تک آنکھیں  نیم تارک ماحول کی عادی ہوچکی تھیں لیکن پھر بھی اسٹیج پر بیٹھی   شخصیات کے چہرے بشر ے کچھ تو دوری  کے سبب اور کچھ مخالف سمت سے مشعل کی روشنی  اور اسٹیج  کے آدھے حصے پر نیم تاریکی  کے سبب، واضح طور پر دکھائی نہ دیتے تھے ۔ ہاں اتنا پتا چل رہا تھا کہ پہلی صف میں  کل سات کرسیاں ایستادہ ہیں جن  پر مختلف  صوفیانہ لباس میں غالباً سات اقالیم کے قطب بیٹھے  ہیں ۔ البتہ ایک شخص جس کی نشست قطب الاقطاب کے بائیں جانب تھی مغربی طرز کے سوٹ میں داڑھی  مونچھ  سے مبّرا تھا ۔ قطب  الاقطاب  کی مرکزی کرسی دوسری  کرسیوں سے قدرے نمایاں  تھی ۔

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • Congratulations to Mr Sultan Shahin Sb for raising this issue at the international forum UNHRC, GENEVA. THE Instant triple talaq is a curse for....
    ( By Raihan Nezami )
  • Your article throws light on the pathetic situation of the Rohingyas. Nobody seems keen to extend assistance...
    ( By Meera )
  • Naseer Sb, You have placed good argument based on Yusuf Ali's translation. But your argument will...
    ( By muhammd yunus )
  • Bangladesh reduced its kafirs from 33% in 1947 to 8% today Hence has plenty of room to take in muslim Rohingya.
    ( By shan94 )
  • Since India's rejection of refuge for the Rohingyas flies in the face of the Indian constitution, the government had....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Everything started by Islam. It thought animals how to eat and humans how to eat animals, that how it is best. Islam thought how wear cloths before ...
    ( By Aayina )
  • In Bangaladesh and Pakistan hindus are facing extermination. No one is bothered about that.
    ( By dr.A.Anburaj )
  • Naseersaab keeps repeating arguments that have already been shot down several times. He ....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • As I had predicted, Naseersaab is now in full takfiri mode! He wants to make my beliefs an issue instead of defending...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • There is no excuse whatever for any country having any blasphemy laws. Free speech....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Well then GM sb, if you agree that in the Quran not all the disbelievers are kafir, then kafir cannot mean disbeliever just as terrorist ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • A believer never has a problem proclaiming his belief very proudly. Neither does a disbeliever have a problem. It is only a hypocrite who has a....
    ( By Naseer Ahmed )
  • Naseer saab, I know what the dictionary definition of kafir is. I also know what some learned people have said about how the word....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Naseersaab again has to use abusive words like "hypocrite". He is truly shameless....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • "A fact-based analysis makes it clear that Muslims are generally trying to integrate...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Trumpism masked as intellectualism.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Rohingya- Children of the Great Mother India. HOMELESS Rohingya CAN be settled in the Brahmputra Basin, in a NEW Home-Stay ....
    ( By Dhirendra Sharma )
  • The way things are moving there will be a major backlash soon .... Loosers? the Muslims!! Sad ... But they would have bought it onto ...
    ( By Rajinder Verma )
  • Is GM sb with the rest of the ulema in continuing to believe that all the Mushrikin were always kafir until they accepted Islam and ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • (62:5) The similitude of those who were charged with the (obligations of the) Mosaic Law, but who subsequently failed in those (obligations), is that of ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • When is this brain washing under religion gone stop.How can a God be if he tells to kill others animals or people it's not God.....
    ( By Prashant )
  • Poor Hats Off! He has to compulsively refute even a plausible claim which most persons would let pass without comment!
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Does GM Sb for the reasons given by him believe in the existence of an immortal soul? Or is he a disbeliever in the ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • before the advent of islam in the world, people did not know how to breath. it was islam that taught the world to breath.
    ( By hats off! )
  • The Sufis Of The 13th And 14th Centuries Paved The Way For The Bhakti Movement...
    ( By Who me )
  • Naseersaab's despicable personal abusive attacks are truly a shame for this ....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Poor Naseersaab just can't get beyond calling me a hypocrite, because being....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • The frame of discourse of the arguments advanced and the discussion in the triple talaq judgments....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • No one has the right to harm another person on the pretext that he or she is not a good Muslim." Killing in the name of ...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • To do so is to risk being unprepared for often messy realities. ….. and to protect...
    ( By Rashid Samnakay )
  • As for the translation, following exactly what you say, isn't the following more correct? He enlightened the nafs to its wrong (fujur) and its right (taqwa)?....
    ( By Naseer Ahmed )
  • As far as blocking of advancement of religious thought on this forum is concerned, it is Yunus Sb who has been blocking it. It took me.....
    ( By Naseer Ahmed )
  • If we believe that religion of Islam, the Quran and the Prophet of Islam are really from true God, the creator of the Universe; ...
    ( By Abbas Ali Baig )
  • Yunus Sb, I find your arguments very strange. You gave seven translations of the verse in support of your interpretation and I said I agree with ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • GM Sb and Yunus Sb are deflecting the issue by trying to make out that the issue is one of defining the correct meaning of ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • He is not. Hats Off is.'
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • According to GM sb, non existence of an immortal soul is an outlandish theory and yet this does not mean that he believes in an ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Islam is the single reason of Global Terrorism. There is islam in the root of terrorism from begining. EVEN .....
    ( By raghubir )
  • tick the correct answer the author is....
    ( By hats off! )
  • It is so difficult to get even simple points through to Naseersaab. When I tell him that the Quran does not...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )