FOLLOW US:

Books and Documents
Urdu Section
Is it Islam? کیا یہی اسلام ہے؟
Roman Rizwi رومان ر ضوی

کسی بھی مسلک کا مسلمان ہو وہ کبھی گوارا نہیں کرتا کہ کسی قبر سے لاش نکالی جائے اس لئے کہ شریعت  اسلامیہ میں نبش قبر (یعنی قبر کھود کر میت باہر نکالنا  حرام ہے) اور ایک عظیم گنا ہ ہے۔ مگر ملک شام میں امریکہ  کے ڈالروں پربکے ہوئے زر خرید بے دین باغی جو اپنے کو مسلمان کہتےہیں۔ گذشتہ روز ان درندہ صنعت لوگوں نے ایسا بے ہودہ کام انجام دیا جو یقیناً خدائے قہار و جبار کو غضب ناک کرنے کےلئے کافی ہے۔ سیریا کے قبر ستان میں دفن جناب حجر بن عدی الکندی الکوفی  کے پا کیزہ جسد کو قبر سے نکال کر نا معلوم مقام پر فرار ہوگئے۔

 

Educational planning imperative for Muslims  مسلمانوں کےلیے تعلیمی منصوبہ بندی نا گریز
Maulana Asrarul Haque Qasmi

اب سےکچھ سال پہلے تک سرکاری اسکولوں و کالجوں کےذریعہ بچوں کو تعلیم دی جاتی تھی ، لیکن بڑھتے وقت کا چلن عام ہوتا جارہا ہے ۔ پرائیویٹ اسکولوں وکالجوں کی بڑھتی مقبولیت سے تعلیم کے میدان میں فائدہ بھی ہوا اور نقصان بھی ۔ فائدہ یہ ہوا کہ تعلیم کا دائرہ قدرے وسیع ہوااور تعلیم کے معیار میں بھی ا ضافہ ہوا ، لیکن فائدہ سےبڑھ کر نقصان زیادہ ہوا۔ پہلا نقصان یہ سامنے آیا کہ تعلیم کے تعلق  سے نظر یہ تبدیل ہوگیا۔ پہلے تعلیم کو برائے خدمت سمجھا جاتا تھا، اب تعلیم کو برائے تجارت تصور کیاجاتا ہے۔ نظریہ  کی اس تبدیلی  نے تعلیم کے نتائج پر گہرا اثر ڈالا ۔ اس تبدیلی سےتعلیم یافتہ لوگوں کی تعداد تو بڑھی مگر خدمت کا جذبہ ماند پڑگیا اور جس طرح تعلیم یافتہ لوگوں کو عوام الناس کے لیے نمونہ ہوناچاہئے  تھا، وہ نمونہ نہ بن سکے۔

 

Taliban’s Tirade Against Democracy جمہوریت کے خلاف طا لبان کی مہم
Nawa-e-Afghan Jihad

طالبان  اور اسلامی شدت پسند طرز حکومت کے متعلق ایک الگ نظریہ رکھتے ہیں۔ ان کے خیال میں صرف خلافت ہی اسلامی طرز حکومت کی حیثیت سے قابل قبول ہے۔ وہ مسلم حکومتوں کے خلاف برسر پیکار ہیں  اور انہیں غیر اسلامی اور کفر پر مبنی  حکومت قرار دیتے ہیں۔ انکے نزدیک  جمہوریت کفر پر مبنی طرز حکومت ہے اور مسلم ممالک کی جمہوری حکومتوں کے منتخب رہنما ان کی رائے میں کافر ہیں۔ عوام جو ان رہنماؤں کو منتخب کرتے ہیں وہ بھی ان کی نگاہ میں کافر اور قابل گردن زدنی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ وہ بے گناہ اور نہتے شہریوں کو رہائشی علاقوں، تجارتی مراکز اور عبادت گاہوں میں خودکش بم دھماکوں میں ہلا ک کرتے ہیں۔

ہم طالبان کے ترجمان رسالے نوائے افغان جہاد میں شائع شدہ دو مضامین یہا ں پیش کررہے ہیں  جو مئی کے شمارے میں شامل ہیں۔ یہ مضامین جمہوریت اور اسلامی جمہوریت کے رد اور تنقیص میں ہیں۔ ان مضامین میں مضمون نگاروں نے اسلامی جمہوریت کو اسلام مخالف ثابت کرنے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگا دیا ہے اور اس کی حمایت میں دور از کار اور مضحکہ خیز دلائل اور منطق پیش کئے ہیں۔ ان کے مطابق اسلامی جمہوریت کا تصور بے بنیاد اور نا قابل قبول ہے جبکہ پاکستان کے روحانی بانی علامہ اقبال نے اشتراکی جمہوریت اور روحانی جمہوریت کو پاکستان کے لئے پسند فرمایا۔  مگر طالبان میں موجود جہلا اور تنگ نظر نام نہاد علما اسلام اور جمہوریت کو ایک دوسرے کی ضد ثابت کرنے پر تلے ہیں اور اس لئے اسلامی جمہوریت کی اصطلاح کو مجموعہ اضداد بتاتے ہیں۔ اس لحاظ سے وہ پالیٹیکل سائنس (پا لیٹکس اور سائنس) ، جینیٹکس انجینئرنگ ( جیندٹکس اور انجینئرنگ) اور ان جیسے دوسرے درجنوں جدید اصطلاحات کو بھی مجموعہ اضداد قرار دینگے جو جدید دور کے تقا ضوں کے مطابق وضع کئے گئے ہیں۔۔۔ نیو ایج اسلام ایڈٹ ڈیسک

 

جمال الدین افغانی نے ایک بار کہا کہ "یہ سائنس ہے جس نے مغرب کو طاقتور اور عظیم بنا دیا، اور مغرب کا اسلامی دنیا پر غلبہ ہے، کیونکہ وہ اس کی طاقت اپنی جیب میں رکھتا ہے ۔ سائنس اصل میں اسلامی دنیا سے آیا، اور اسی لئے ، اسلامی سائنس، سائنس پر مغرب کی ملکیت اور مغرب کی اسلامی دنیا پر غلبہ کے لئے ذمہ دار ہے ۔ لہذا، تمام مسلمانوں کو جو کرنا  ہے وہ یہ ہے کہ ، وہ اس سائنس کی  اپنے لئےبازیافت کریں، تاکہ وہ ماضی کی عظمت  تک پہنچ سکیں اور ایک طاقتور تہذیب بن سکیں" ۔ لیکن ابھی تک مسلمانوں کی عمومیت کو ضروری کام کرنا ہے ۔ ترکی اور ملیشیا نے کچھ پیش رفت کی ہے، اور سائنس کو آگے بڑھانے کی نقل کے لئے اچھی  مثالیں ہیں۔

 

Mona Prince: Latest Victim of Salafist Intolerance in Egypt  مونا پرنس: مصر میں سلفی تعصب  کی تازہ شکار

مصر میں مذہبی عدم روادری کی تازہ ترین شکار مونا پرنس ہے ، جو کہ ایک معروف مصنف اور ناول نگار اور جامعۃ قناة السویس  مصر میں  شعبہ تعلیم میں پروفیسر ہیں۔ ان پراخوان المسلمون سے منسلک طلباء کے ذریعہ مذہب کی توہین کا الزام عائد کیا گیاہے۔انہوں نے صرف اتنا کیا تھا کہ  طالب علموں کے ساتھ مصر میں جاری فرقہ وارانہ کشمکش کے تناظر میں فرقہ واریت پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے، سلفیوں  کے ذریعہ فروغ دئے جا رہے فرقہ واریت کی تنقید کی۔ موضوع پر مونا پرنس اور طالب علموں کااتفاق تھا ، اور اس موضوع پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے انہوں نے سلفی طلباء کے ذریعہ لگائے گئے ،یونیورسٹی کی دیواروں پر پوسٹر کی طرف اشارہ کیا جس میں لکھا تھا کہ ‘شیعہ دشمن ہیں ’ اور یہ کہا کہ ہم اسے ہی فرقہ واریت کہتے ہیں  ۔ لیکن کلاس کے بعد کچھ طالب علموں نے فیکلٹی کے ڈین کے پاس ، اسلام توہین کرنے کا الزام لگاتے ہوئے  مونا پرنس کے خلاف ایک شکایت درج کرا دی ۔

 
Islam, wisdom and olive اسلام، عقل اور زیتون
Nastik Durrani, New Age Islam ناستک درانی

سوڈان کے اخبار ‘‘الرای العام ’’کے مطابق زمزم کے پانی کی معجزانہ خصوصیات سے پردہ کشائی کا سہرا دراصل جاپانی محقق مسارو اموتو کے سر جاتا ہے، اس سائنسدان نے یہ ثابت کیا کہ زمزم کے پانی کے ذرات پر جب بسم اللہ پڑھی جاتی ہے تو پانی کے خواص پر اس کا ایک عجیب طرح کا اثر ہوتا ہے، مزید برآں انہوں نے یہ ثابت کیا کہ زمزم کے پانی میں ایک ایسی خاصیت ہے جو دنیا کے کسی اور پانی میں نہیں اور وہ یہ ہے کہ اگر اس کا ایک قطرہ عام پانی کے ہزار قطروں میں شامل کردیا جائے تو وہ پانی بھی اسی کی خصوصیات کا حامل بن جاتا ہے، اس عظیم جاپانی سائنسدان نے دعوی کیا کہ اسے یہ پانی جاپان میں مقیم ایک عرب سے ملا، اور اس پر تجربات کرنے پر اس نے یہ نوٹ کیا کہ اس کے ذرے دنیا کے کسی بھی دوسرے پانی سے نہیں ملتے اور لیبارٹری میں ہونے والے تمام تر تجربات اس کی خاصیت کو بدلنے میں ناکام رہے، اس کی تحقیق سے مزید انکشاف ہوا کہ بسم اللہ جس سے مسلمان اپنے کھانے پینے کا آغاز کرتے ہیں کا اس پانی پر عجیب اثر ہوتا ہے، اور صرف یہی نہیں بلکہ اللہ کے ننانوے نام بھی اس پر بعینہ وہی اثر ڈالتے ہیں جو بسم اللہ ڈالتا ہے۔

 

مسلمانوں کو سختی، غصہ، اور چیلنجنگ نقطہ نظر سے گریز کرنا چاہئے، اس  لئے کہ یہ قرآن کے طریقہ کار اور اس کے جوہر کے برعکس ہے ۔ اس کے بجائے مسلمانوں کو قابل قبول، معتدل، پرسکون اور منطقی نقطہ نظر اپنانے کی ضرورت ہے، جیسا کہ قرآن نے بیان کیا ہے۔ دوسرے الفاظ میں، انہیں انسانیت کے لیے رول ماڈل ہونا ،اور اسلام اور خود کے اخلاقیات کے لئے لوگوں کی تعریف حاصل کرنا لازمی ہے۔ مسلمانوں کو سائنس، ثقافت، آرٹ اور جمالیات میں عظیم ترقی اور بہترین کارنامہ انجام دینا چاہئے،اور ساتھ ہی ساتھ اسلام کو شاندار طریقے سے زندہ بھی رکھنا چاہئے، اور اس طرح اسے دنیا میں ہیش کرنا چاہئے۔

 

Pakistan: New Governments, Prolonged Problems, Grave Concerns نئی حکومتیں، پرانے مسائل اور گہرے خدشات
Mujahid Hussain, New Age Islam

یہ کہنا مشکل ہے کہ نئی حکومت پاکستان میں دہشت گردی اور فرقہ واریت کا تدارک کرسکے گی البتہ اس کی نوعیت میں کچھ واضح تبدیلیاں ضرور آئیں گی۔پاکستان میں فرقہ وارانہ کشیدگی بڑھے گی اور قومی اسمبلی میں اس حوالے سے قانون سازی کے لیے بعض متنازعہ بل بھی پیش کیے جائیں گے۔فرقہ پرستوں کے پاس چونکہ وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ سیاسی طاقت بھی آتی جارہی ہے اس لیے اِن کو روک دینا نہایت مشکل ہوگا۔

 

Do The Hebrew Religions Explain How The Universe Was Created?  کیا کسی عبرانی مذہب میں  کائنات کی تشکیل کی وضاحت ہے؟
Asif Merchant, New Age Islam

چونکہ تخلیق کو سمجھنا بہت مشکل ہے، یہ اس شعور کی طرف اشارہ ہے کہ خالق عام تصورات کے ذریعہ  بیان نہیں کیا جا سکتا ۔ در اصل، کوئی کسی بھی حد  تک یہ کہہ سکتا ہے کہ   ‘ آپ خدا کے بارے میں جو کچھ بھی کہیں گے ، وہ  غلط ہی ہوگا ’ ۔ براہ راست کوئی حوالہ  پیش کرنے سے بہتر ، اس سے احتراز کرنا ہے۔ زیادہ سے زیادہ، کوئی ان موضوع پر بات کر سکتا ہے۔ شاید اسی لئے پیغمبر اسلام (صلی اللہ علیہ وسلم) نے فرمایا  کہ،سائنس کے مطالعہ میں ایک گھنٹہ صرف کرنا ، ایک سال کی عبادت سے بہتر ہے ۔ سائنس کے مطالعہ میں، کوئی  تخلیق کے بارے میں کچھ ادراک حاصل کر سکتا ہے۔ یہاں پھر، میں اس بات کی تصدیق کروں گا کہ  اگر آپ سائنس کا مطالعہ انتہائی لغوی طور پر نہ کریں، بلکہ  اس سے آگے جانے کی کوشش کریں، تو تخلیق کی ایک جھلک حاصل کرنا ممکن ہے ۔

 

Will Shiite and Sunni Islam Ever Reconcile?  کیا شیعہ اور سنی اسلام میں کبھی مفاہمت ہوگی ؟
Mike Ghouse Tr. New Age Islam

سنی مسلمانوں کا یہ ایمان ہے کہ رسول اللہ (صلی اللہ  علیہ وسلم) نےفرمایا  ہے کہ، میں اپنے بعد کتاب (قرآن) کو، پیروکاروں کے لئے مذہب سیکھنے ، سمجھنے اور اس پر عمل کرنے کے لئے چھوڑ کر جا رہا ہوں۔ ہر ایک اپنے عمل کے لئے انفرادی طور پر جوابدہ ہے، جبکہ شیعہ مسلمانوں کا یہ ایمان ہے کہ نبی نے یہ بھی فرمایا ہے کہ وہ رہنمائی کے لئے اپنی اولاد کو  اپنے بعد چھوڑ کر جا رہے ہیں۔

 
The Rule Of Mahram And Helpless Women محرم اور محرومیت
Nastik Durrani, New Age Islam ناستک درانی

بہترین حالات میں ولی عورت کے معاملات کی بحسن وخوبی دیکھ بھال کرتا ہے، اس کے لیے آسانیاں پیدا کرتا ہے اور اس کے ساتھ چلتا ہے اگرچہ اس میں اس کے لیے بھی کافی مشقت اور پریشانی ہوتی ہے، لیکن زیادہ تر حالتوں میں ولی ایسا نہیں کرتا، بلکہ اس قانون کا غلط فائدہ اٹھاتا ہے اور عورت کو بلیک میل کرتا ہے، کتنی ہی بیویاں اپنی ساری تنخواہ محض اس لیے شوہر کے ہاتھ میں رکھ دیتی ہیں تاکہ وہ انہیں دفتر چھوڑنے جایا کرے، کتنے ہی باپ اپنی مطلقہ بیویوں سے بدلہ لینے کے لیے اپنی بیٹیوں کی تعلیم رکوا دیتے ہیں، کتنی ہی بہنیں چھوٹی چھوٹی باتوں کے لیے اپنے بھائیوں کو رشوت دیتی نظر آتی ہیں    

 

تقیہ شیعہ  سائیکی  میں کچھ اسی  طرح سرایت کر گیا کہ بڑےبڑے فقہاء  و مجتہدین نے بدعات  و خرافات پراپنی زبانیں بند رکھنے میں عافیت جانی۔ مثال کے طور پر عزاد اری  کی وہ بدعتیں  مثلاً تعزیہ ، شیبیہ ، اور خونی  ماتم وغیرہ جنہیں  علماء مجتہدین  دین مبین  سے انحراف  پر محمول  کرتے ہیں وہ خود تو اس میں شریک  نہیں ہوتے  کہ عرب و عجم یا بلادِ غرب میں جہاں  بھی تلوار زنی اور لہو آمیز  زنجیرو ں  کا ماتم  منعقد  ہوتا ہے ، آج تک کسی نے حلقہ علماء  کے خواص کو لہولہان  پیٹھ اور خون آلود چہروں  کے ساتھ نہیں  دیکھا کہ  وہ دل سے ان خرافات کو گمراہی  پر محمول  کرتے ہیں لیکن  ان کے امتناع  کے سلسلے  میں کبار  مجتہدین  بھی تقیہ  کی راہ  پر گامزن رہے ہیں۔ اس صورت  حال نے نہ صرف یہ کہ فقہا ئے اہل بیت کو قول  و عمل  کی دوئی سے دوچار  کر رکھا ہے  بلکہ سچ پوچھئے  تو تقیہ  کے اس نظر ی ماحول  میں کسی  مؤثر اصلاحی تحریک  کی گنجائش بھی باقی نہیں رہ گئی ہے۔

 

میں آپ کو بتانا چاہتا ہوں کے، سب سے پہلے جو ایک فتویٰ ہمارے یہاں آیا  ایک کتاب آئی، وہ مولانا منظور احمد نعمانی صاحب   کی تھی جو ہندوستان کے ہیں، ایرانی انقلاب کے نام سے وہ کتاب آئی، جس میں شیعہ کے عقائد کوبڑی وضاحت کے ساتھ ، پھر ان کے جو اکابرین ہیں، شیعہ علماء  جیسے باقر مجلسی وغیرہ، ان کی تمام تر تحریریں تھیں اس میں سے جو  عقائد تھے صحابہ اکرام کے بارے میں ، ازواج مطہرات کے بارے میں اور دیگر  اکابرین اسلام ہیں ان کے بارے میں،  تو  وہ چونکہ بالکل نئے تھے،  پاکستان جیسے ایک سنّی  Dominated  مسلمانوں  کا سماج ہے، وہ اس میں  پھیلنا شروع ہوئے اور پھر یہ کتاب آ گئی اور  اس کے مندرجات پر لکھا جانا شروع ہوا۔

 

The Great Islamic Divide: Sunnis Vs Shi’ites  عظیم اسلامی تقسیم: سنی بمقابلہ شیعہ
Neville Teller, Tr. New Age Islam

شام کا انقلاب حکومت کے خلاف سنیوں  کی قیادت والی بغاوت ہے، لیکن وہ یقینی طور پر شام کےاندرونی عناصر تک محدود نہیں ہے۔ انٹرنیشنل ہیرالڈ ٹربیون کے نوید حسین نے بیان کیا، کہ کس طرح شام القاعدہ سمیت عالمی جہادیوں کے لئے ایک مقناطیس بن گیا ہے، جس میں عراق اور ترکی سے تقریباً  6000 عسکریت پسندوں کو حکومت گرانے میں مدد کے لئے  بھیجا ۔ اور نہ ہی معاملہ بالکل ایسا ہے۔ حسین اس بات کی نشان دہی کرتے  ہیں کہ یورپ جیسے دور رداز علاقوں سے، سنی انتہا پسند شام میں ،ان کے  نظریاتی حلیفوں ، جبہۃ النصرہ (القاعدہ کی شامی شاخ)، احرار الشام (بنیاد پرست سلفی)، سے،  بشر الاسد کی "بدعتی  حکومت" کے خلاف ایک ‘‘جہاد’’  میں ، سے جڑنے کے لئے ، گھس پیٹھ کر رہے ہیں ۔ حال ہی میں خود کش بم دھماکوں اور اغوا کی وارداتوں میں اضافہ، جہادی حکمت عملی کی نشانی  ہے۔

 
The Sun Of Damascus دمشق کا سورج
Syed Hamidul Hasan سیّد حمید الحسن

The Sun Of Damascus  دمشق کا سورج
Syed Hamidul Hasan

انٹر نیٹ کے ذریعہ جو تصویر ہر طرف ایک صحابی رسول صلی اللہ علیہ وسلم  کی عام ہوگئی ہے اگر خدانخواستہ یہ فرضی ہے تب بھی ہمارا امتحان ہے کہ ہم نے صرف صحابیت رسول سے منسوب چہرے کے لئے کیا محسوس کیا ۔ محبت؟ احترام؟ عقیدت؟ ہمیں تو ایسا لگا جیسے ہم 1400 برس پہلے کی دنیا میں ہیں اور ہم ان باتوں کو جاننا چاہتے ہیں جو اس نورانی چہرے والے سے وابستہ ہیں۔ یہ ہمارا اسلامی فریضہ بھی ہے اور انسانی جذبہ بھی کہ ہم معلوم کرلیں اور اگر یہ تصویر واقعی اسی شخصیت کی ہے جن کا نام حجر ابن عدی الکندی الکوفی الیمانی تھا تو یہ تاثرات بالکل  اپنی صحیح  راہ پر ہیں۔ ارے! یہ چہرہ؟ جس صحابیت حضور صلی اللہ علیہ وسلم کو کتابوں میں پڑھتے تھے ہماری قسمت کہ ہم ان میں سے کسی کو دیکھ سکیں؟ کیا ایسے  ہی ہوتے تھے اصحاب رسول صلی اللہ علیہ وسلم ؟

 

Take Care of Your Heart  اپنے دل کی حفاظت کریں
Sadia Dehlvi, Tr. New Age Islam

کسی کے دل میں تکبر سے مقابلہ کرنے  کا ایک اہم راستہ اس انسان  کے سامنے خود کو جھکانا ہے،جو تکبر کرتا ہے، اور ایسا کا م تلاش کرنا ہے جو دوسروں کی  انانیت کو توڑنے  اور انکساری میں  اضافہ میں کار آمد ہو  ۔ جسمانی طور پر دوسروں کی،  اور خاص طور پر عمر رسیدہ اور غریب کی خدمت کرنا ، ایسے اعمال ہیں جو کہ انکساری پیدا کرتے ہیں اور یہ خدا تک پہنچنے کا یقینی راستہ ہے ۔ دل کو صاف کرنے اور اسے زنگ آلودہ ہونے سے بچانے  کا بہترین طریقہ، خدا کی مسلسل یاد، اس کی پناہ کے لئے نیاز مند ہونا اور دل کی بیماریوں سے تحفظ کا راستہ تلاش کرنا ہے۔

 

14 مئی کو، جارج ٹاؤن یونیورسٹی میں، مذہبی آزادی اور اسلام میں اقلیتوں کے حقوق پر سمپوزیم کے دوران، ریاست ہائے متحدہ امریکہ میں جنوبی افریقہ کے سفیر ابراہیم رسول نے کہا کہ جب خود ایمان کے اصول خطرے میں ہوں، جیسا کہ جنوبی افریقہ میں نسلی تفریق  کے دور میں ہوا، مذاہب کے درمیان نظریاتی اختلافات بے معنیٰ  ہو جاتے ہیں۔

 

خدا ایک ہے۔ وہ منصف اور عادل ہے، اور وہ چاہتا ہے کہ ہم جنت کا انعام حاصل کریں ۔ تاہم، خدا نے ایک امتحان  کے طور پر اس دنیا کی زندگی میں ہمیں بھیجا ہے ، نااہل سے اہل بننے کے لئے۔ اور اگر ہمیں اپنے ارادے  پر چھوڑ دیا جائےتو ہم برباد  ہو جائیں گے۔ کیوں؟ کیونکہ ہم نہیں جانتے کہ وہ ہم سے کیا چاہتا ہے۔ ہم اس کی راہنمائی کے بغیر اس کی زندگی  کے بدلاؤ اور تبدیلیوں  کو عبور  نہیں کر سکتے، اور اسی وجہ سے، اس نے ہمیں وحی کی شکل میں ہدایت دی ہے ۔

 

Wahi and Shruti: A Close Resemblance وحی اورشروتی: ایک گہری مشابہت
Ghulam Rasool Dehlvi, New Age Islam

ہندوازم  میں شروتی کا تصور، اسلام میں وحی  (وحی الٰہی) کے تصور سے گہری مشابہت رکھتا  ہے ۔ وحی یا قرآنی آیات، نا زل شدہ  کتاب کے مفہوم میں، شروتی ہیں، جبکہ حدیث کی سند ثانوی ہے، جیسا کہ ہندوازم  میں اسمرتی ہے۔ جیسا کہ  شروتی کے متون، ہندو عقیدے کے مطابق، خدا کے الفاظ ہیں، کیونکہ انہیں  قدیم سنتوں  کے ذریعہ خدا سے "سنا" گیا تھا، اسی طرح قرآن پاک لفظ بہ لفظ اللہ کا کلام ہے،جسے فرشتہ جبرائیل کے ذریعے اس  کے آخری نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے سنا ہے۔ اس بات کے  بہت زیادہ امکانات ہیں کہ وہ پہلے کے  سنت ہو سکتا ہے کہ  جنہوں نے  شروتی یا ویدوں کے متون کو سنا یا جنہیں سکھایا گیا ،انبیاء ہوں  جن پر ، در اصل  خدا نے انہیں نازل کیا ہو ۔ قرآن خاتم النبین  ، محمد صلی اللہ علیہ وسلم ، پر نازل کیا گیا تھا، اور اسے  پہلے انبیاء پر نازل شدہ صحیفوں کی توثیق اور تکمیل کے طور پر نازل کیا گیا تھا۔

 

Joining Islam Is Like Joining an Army  پاکستان میں رہنا ہے تو اسلام پر عمل کرنا ہوگا
Anwar Ghazi

اگر کسی نے اسلام قبول نہیں کیا ہے تو یہاں اس پر کوئی زور زبردستی نہیں اور اسلامی حکومتوں میں انہیں مکمل تحفظ بھی حاصل رہا ہے، لیکن جس نے اسلام قبول کیا ہے، اس کے لئے ضرور اسلام کچھ ضابطے مقرر کرتا ہے او ریہ ضابطے ظلم کے زمرے میں نہیں آتے، بلکہ انسانیت کی بقا کے لئے ہوتے ہیں۔ اگر امریکہ وبرطانیہ کے انسانوں نے کچھ ضابطے مقرر کررکھے ہیں اور اسے وہاں کے لوگ حرزِ جان بناتے ہیں تو کیوں نہ ہم دنیا کی بہترین ہستی محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی لائی ہوئی شریعت کو اپنے لئے سرمایہ بنائیں! اب اگر کوئی شخص اپنے آپ کو حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کے لائے ہوئے نظام کا پابند نہیں سمجھتا۔ اسے اس پابندی میں مشکلات پیش آتی ہیں تو اس کے لیے اس سے اچھا مشورہ کیا ہوسکتا ہے کہ وہ اپنا نام اقلیتوں میں درج کرالے۔

 

Asghar Ali Engineer: An unparalleled thinker  ایک بے مثال مفکر ڈاکٹر اصغر علی انجینئر
Teesta Setalvad

اصغر صاحب پوری زندگی پیکر انکسار اور ہمدردی کی مثال بن کر رہے ۔ لیکن کبھی انہوں نے اس بات کا دکھاوا نہیں کیا ۔ جب وہ 1969 میں احمد آباد میں رونما ہونے والے فرقہ وارانہ تشدد سےدلبر داشتہ ہوگئے تو انہوں نے بامبے میونسپل کارپوریشن  سے استعفیٰ دے دیا اور ہر طرح  کی فرقہ واریت سے  جنگ  کرنے کے لیے انہوں نے اپنی زندگی  وقف کردی۔ حقیقت  کی  تہہ تک پہنچنے پر اس بات کا انکشاف ہوا  کہ فرقہ وارانہ تشدد کے دوران پولیس فورس  اور انتظامیہ  کا بڑھتا ہوا امتیازی سلوک کار فرمارہا ہے اور اس روش کا آج بھی  ہم سامنا کررہے ہیں۔ انہوں نے ناانصافی  ، معاشرتی مقاطعہ اور تشدد کے خلاف اپنی پوری طاقت کے ساتھ جد و جہد  جاری رکھی ۔

 

Religious Groups and Identity: A Feeling of Hopelessness  مذہبی جماعتیں اور  شناخت: ناامیدی کا ایک احساس
Aiman Reyaz, New Age Islam

ہمارا مذہبی تشخص دیگر مذہبی کمیونٹی کی موجودگی میں ظاہر ہوتا ہے ، یہ ہمارے تحفظ کے لئے ہے۔ ہمارا دماغ اس طرح عمل کرتا ہے کہ وہ خود کو ایک ہی گروپ کے ارکان کے ساتھ جوڑ کر تحفظ فراہم کرنے کی کوشش کرتا ہے۔ یہ حفظ نفس ہزاروں سال کی ہماری ذہنی تشکیل کی وجہ سے ہے۔ بعض ماہرین نفسیات کا خیال ہے کہ ہم لازمی طور پر  باہم منحصر ہیں ، کہ ہماری ترقی کی تاریخ ایک دوسرے پر ایک اجتماعی علم اور معلومات کے اشتراک کے لئے ضروری انحصار میں سے ایک ہے، یقینا، اس طرح کا جماعتی تعلق  ایک نوع  کے طور پر ہماری بقا کے لئے ضروری ہے۔ ہماری بقا کے لئے ضروری ہے کہ ، ہم ایک گروپ کا ایک حصہ بنیں جو اس طرح  سوچتا،عقیدہ رکھتا  اور کام کرتا ہو ،  جس طرح ہم کرتے ہیں ۔

 

حضرت علی رضی اللہ عنہ کی فضیلت کا اس زورو شور سے چرچہ ہوا کہ بسا اوقات محبان اہلبیت کا اسلام مذہب اساسین کے طور پر دیکھا جانے لگا جہاں محمد ؐاور علی دو روشنی کی حیثیت سے ایک دوسرے کے لیے لازم اور ملزوم ہوں ۔وصی کے بعد کے بغیر نبی کا تصور ناممکن قرار پایا ۔بعض آزاد منش غالیوں نے تو یہاں تک کہہ ڈالاکہ نبوت تو علی کے لیے مخصوص تھی  البتہ غلطی سے محمد ؐکے حوالہ ہو گئی۔کسی نے کہا کہ نبوت تو ختم ہو گئی البتہ علی اور ان کےسلسلے کے ائمہ کی ولایت جاری ہے ،جنھیں محدث اور مفہم کا مقام حاصل ہے۔اور یہ کہ حضرت علی کا مقام محمد ؐ سے چار درجے آگے ہے۔اس قسم کے خیالات نے مسلمانوں کے مختلف حلقوں کے لئے پراگندہ فکری کاوا فر مواد فراہم کیا۔

 
The Final Message آخری پیغام
Asif Merchant, New Age Islam آصف مرچنٹ

The Final Message  آخری پیغام
Asif Merchant, New Age Islam

مسلمانوں کا عقیدہ ہے کہ خالق نے گاہے بگاہے، نبیوں  کو مبعوث فرماکر انسانیت کو ہدایت دی ہے۔ سب سے پہلے آدم(علیہ السلام ) آئے، جنہوں نے اپنی  اولاد کو ہدایت دی  ۔ سب سے آخری نبی محمد (صلی اللہ علیہ وسلم ) ہیں، جو آخری پیغام کے ساتھ آئے تھے ۔ عام طور پر، مسلمان اسے وہیں چھوڑتے ہیں ۔ حالانکہ محمد  صلی اللہ علیہ وسلم کا پیروکار ہونا فخر کا معاملہ سمجھا جاتا ہے، لیکن اس بات کے بارے میں بہت کم سوچا جاتا ہے کہ آخری پیغمبر محمد  صلی اللہ علیہ وسلم کا آخری پیغام کیا تھا ۔

 

اس نجدی فتنہ کے بارے میں رسول اللہ نے پہلے ہی پیشین گوئی کر دی تھی کہ نجد سے شیطان کا سینگ نکلے گا اور پوری دنیا میں فتنہ پیداکرے گا اور محمد ابن وہاب نجدی اسی نجد میں پیدا ہوا جس نے سب  سے پہلے اولیاء اللہ کے مزاروں کو گرا کر اس فتنہ کو شروع کیا اور وسیلہ، شفاعت اور تعظیم کا قرآنی عقیدہ رکھنے والےمسلمانوں سے کہا کہ وہ توبہ کریں اور پھر سے اس کے سامنے کلمہ پڑھ کر اس بات کی گواہی  دیں کہ وہ اور اس کے آبادء واجداد اس سے پہلے مشرک اور بت پرست تھے اور جن لوگوں نے اس کی بات  مان لی اس نے انہیں چھوڑ دیا اور جن لوگوں نے اس کی باتوں پر عمل نہیں کیا انہیں قتل کر دیا گیا۔ ان کا مال و اسباب لوٹ لیا گیا اور ان کے عورتوں کو کنیزیں بنا لیا گیا ۔

 
1 2 ..35 36 37 38 39 40 41 42 43 44 ... 80 81 82


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on forced conversions to Islam in PakistanPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

NEW COMMENTS